امریکہ، پاکستان کے تعلقات ایک اہم دور میں داخل ہو چکے ہیں: شاہ محمود قریشی

اسلام آباد (پبلک نیوز) وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے امریکی حکام کے پاکستان کے بارے میں بیانات کو مثبت قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ آج پاکستان پر انگلیاں اٹھانے کے بجائے افغانستان کے حوالے سے پوری دنیا ہمارے کردار کو سراہ رہی ہے۔

 

وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی جرمنی کے شہر میونخ میں ہونے والی گلوبل سیکیورٹی کانفرنس میں پاکستان کی نمائندگی کے لئے روانہ ہو گئے۔ وزیر خارجہ کی اس اہم دور میں افغان صدر اشرف غنی اور امریکی کانگریس کے اہم وفد سے ملاقات متوقع ہے۔ روانگی سے قبل گفتگو میں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ میونخ کانفرنس میں عالمی سیکورٹی صورتحال پر مستقبل کے لئے مربوط لائحہ عمل مرتب کیا جائے گا۔

 

افغانستان کا خصوصی ذکر کرتے ہوئے شاہ محمود قریشی نے کہا کہ آج یہ مسئلہ پوری دنیا میں زیر بحث ہے، میونخ میں افغان صدر اشرف غنی اپنا نقطہِ نظر پیش کریں گے اور وہ پاکستان کے مؤقف کو سب کے سامنے رکھیں گے۔ وزیر خارجہ نے بتایا کہ میونخ میں ان کی امریکی کانگریس کے وفد سے ملاقات بھی متوقع ہے۔ وزیر خارجہ نے کہا کہ امریکہ اور پاکستان کے تعلقات ایک اہم دور میں داخل ہو چکے ہیں، بطور وزیر خارجہ ان کی پہلے دن سے کوشش تھی کہ پاک امریکہ تعلقات کو ازسرنو استوار کیا جائے۔

 

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے امریکی حکام کے حالیہ بیانات کو انتہائی مثبت قرار دیتے ہوئے کہا کہ اب پاکستان پر انگلیاں اٹھانے کے بجائے پاکستان کے کردار کو سراہا جا رہا ہے۔ پاکستان افغانستان میں قیام امن کے لئے جو کوششیں کر رہا ہے۔ انہیں آج دنیا سراہ رہی ہے۔ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ ان کی روس، جرمنی، کنیڈا اور ازبکستان کے وزرائے خارجہ سے ملاقاتیں ہوں گی۔ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ان کی خواہش ہے کہ ای یو خارجہ امور کی سربراہ سے بھی ملاقات ہو جائے تا کہ پاکستان اور یورپی یونین کے سٹریٹیجک انہانسمنٹ پلان کو حتمی شکل دینے میں مدد مل سکے۔

عطاء سبحانی  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں