شہباز شریف کے بے نامی بینک اکاؤنٹس کے بعد بے نامی جائیدادوں کا انکشاف

لاہور(ادریس شیخ) اوپوزیشن لیڈر شہباز شریف اور اہل خانہ کے بے نامی بینک اکاؤنٹس کے بعد بے نامی جائیدادوں کا بھی انکشاف ہوا ہے۔ سلمان اور حمزہ شہباز ملک بھر میں اربوں روپے مالیت کی بے نامی جائیداد کے مالک ہیں۔

تفصیلات کے مطابق نیب ذارئع کا کہنا ہے کہ شہباز شریف اور اہل خانہ کے بینامی بینک اکاؤنٹس کے بعد بے نامی جائیدادوں کا بھی انکشاف ہوا ہے۔ سلمان، حمزہ ملک بھر میں اربوں روپے مالیت کی بینامی جائیداد کے مالک بھی ہیں۔ شہباز شریف اور صاحبزادوں کی بینامی جائیداد وفادار ملازمین کے نام پر ہے۔ شہباز شریف اور اہل خانہ کی ظاہر کردہ جائیداد اونٹ کے منہ میں زیرے کے مترادف ہے۔

 

 نیب ذرائع کا مزید کہنا تھا کہ شہباز شریف کے صاحبزادے لاہور، فیصل آباد، شیخوپورہ، اوکاڑہ سمیت مختلف شہروں میں اربوں کی جائیداد کے مالک ہیں۔ کالے دھن سے بنائی جائیداد کو قانون کی گرفت سے بچنے کیلئے ملازمین کے نام پر منتقل کیا گیا۔ تمام بینامی جائیداد کرپشن کی رقم سے بنائی گئی ہیں۔ شہباز شریف، سلمان، حمزہ اور نصرت شہباز کے اکاؤنٹس میں جعلی ترسیلات کے ذریعے اربوں روپے جمع کروائے گئے۔

 

نیب لاہور کو شریف فیملی کے دیگر بزنسز کا ریکارڈ بھی ملنا شروع ہو گیا ہے۔ شہباز شریف، حمزہ شہباز، سلمان شہباز، نصرت شہباز اور جوریہ عمران کے بزنسز کا ریکارڈ مختلف اداروں نے جمع کروا دیا ہے۔ ایف بی آر، اسٹیٹ بنک آف پاکستان، سکیورٹی ایکسجینج آف پاکستان ریونیو، ایل ڈی اے نے ریکارڈ جمع کروایا ہے۔ جبکہ شریف فیملی کیجانب سے ابھی نامکمل ریکارڈ فراہم کیا گیا ہے۔

 

نیب نے رمضان شوگر مل کے بعد شریف ڈیری فارمز، شریف ملک پراڈکٹس، شریف فیڈ ملز، شریف پولٹری فامز، العریبیہ شوگر مل، حمزہ سپنگ مل، کلثوم ٹیکسٹائل کا ریکارڈ طلب کر رکھا ہے۔ جبکہ محمد بخش ٹیکسٹائل، کوالٹی چکن، شریف کرسٹل سمیت متعدد بزنسسز کا ریکارڈ حاصل کر لیا گیا ہے۔

عطاء سبحانی  1 ماه پہلے

متعلقہ خبریں