پنجاب کے خادم اعلیٰ، بیوروکریٹس نے آخری سال کروڑوں روپے دعوتوں میں اڑا دیئے

لاہور (پبلک نیوز) آم کے آم، گٹھلیوں کے دام، خادم اعلیٰ اور چہیتے بیوروکریٹس نے اقتدار کے آخری سال کروڑوں دعوتوں اور تحفوں کی مد میں اڑائے۔

گزشتہ مالی سال میں ن لیگی کی حکومت نے 24 کروڑ روپے صرف دعوتوں اور تحفے تحائف کی مد میں خرچ کیے۔ سب سے زیادہ اخراجات ایوان وزیر اعلیٰ میں 22 کروڑ 70 لاکھ روپے کیے گئے۔ گورنر ہاؤس میں دعوتوں کی مد میں 6 لاکھ 68 ہزار خرچ کیے گئے۔

بیوروکریسی نے بھی بہتی گنگا میں خوب ہاتھ دھوئے۔ ڈپٹی کمشنرز نے 62 لاکھ اور اسسٹنٹ کمشنرز نے 10 لاکھ دعوتوں کی مد میں خرچ کیے۔ کمشنرز 10 لاکھ ،ڈی جی پروٹوکول 3 لاکھ، پبلک ہیلتھ انجنیئرنگ 5 لاکھ ،محکمہ ایکسائز نے 3 لاکھ روپے دعوتوں اور تحفے تحائف کی مد میں استعمال کیے۔

محکمہ ایس اینڈ جی اے ڈی نے 65 ہزار ،محکمہ ماحولیات نے 60 ہزار، محکمہ زراعت نے 58 ہزار روپے دعوتوں اور تحفوں کی مد میں خرچ کیے۔

احمد علی کیف  3 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں