ہم نے ایمنسٹی سکیم دی تو بری، اب اچھی کیسے ہو گئی؟ شاہد خاقان عباسی

اسلام آباد (پبلک نیوز) مسلم لیگ ن کے رہنماء اور سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ سیاسی انتقام کی ہی سیاست کھیلنی ہے تو خود بھی تیار ہوجائیں۔ کوئی کرے تو کرپشن اور یہ کریں تو کرپشن نہیں۔ آئی ایم سے معاہدہ ہو گیا مہنگائی اور بے روزگاری بڑھے گی کم نہیں ہوگی۔ گیس کے بلوں پر ڈاکے پڑ رہے ہیں ان کو کوئی پوچھنے والا نہیں۔

 

 

شہر اقتدار میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ سیاسی انتقام میں نئے باب کا اضافہ ہوا ہے۔ امیر مقام کے بیٹے پر 3 کروڑ سے کم کا الزام ہے۔ 4 سال سے کام کے متعلق کوئی شکایت نہیں کی گئی۔  خط لکھا گیا منصوبے میں کرپشن  ہے تفتیش کرنی ہے۔ اگر حکومت ناکام ہوگئی ہے تو ہمارا کوئی قصور نہیں۔ ٹھیکہ ہماری حکومت نہیں پیپلز پارٹی دور کا ہے۔

 

شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ سیاسی انتقام کی ہی سیاست کھیلنی ہے تو خود بھی تیار ہوجائیں۔ 4 سال بعد پتہ چلا 3 کروڑ کی کمی ہے۔ بینک اکاؤنٹ کے 35 کروڑ کے کاغذات پاس ہیں تحقیق کرالیں۔ بی آر ٹی کا ٹھیکا کتنے پیسے سے شروع ہو کہاں پہنچ گیا کسی کو پتہ نہیں۔ کوئی کرے تو کرپشن اور یہ کریں تو کرپشن نہیں۔ 40 ارب کا منصوبہ 100 ارب سے اوپر چلا گیا۔ ہم ایمنسٹی اسکیم دی تو بری اور انہوں نے دی تو ٹھیک ہے۔

 

رہنماء مسلم لیگ ن کا کہنا تھا کہ پاکستان کے عوام کو حقائق بتانے کے  لیے آپ سب کے سامنے آتے ہیں۔ ن لیگ نے 3 ہزار ارب کی ڈویلپمنٹ کی ایک پیسے کی کرپشن ڈھونڈ دیں۔ آئی ایم سے معاہدہ ہو گیا مہنگائی اور بے روزگاری بڑھے گی کم نہیں ہوگی۔ گیس کے بلوں پر ڈاکے پڑ رہے ہیں ان کو کوئی پوچھنے والا نہیں۔

 

ان کا کہنا تھا کہ عوام بے روزگاری، مہنگائی میں پس رہے ہیں۔ جو حال 8 ماہ میں ملک کا کیا گیا ہے کبھی نہیں ہوا۔ 8 ماہ میں اتنی تباہی ہے تو 5 سال میں کیا کریں  گے۔ سی پیک کو ٹارگٹ کیا جا رہے اجلاس بلا کر بحث ہونی چاہیے۔ ملکی ادارے سیاسی انتقام کے لیے استعمال ہو رہے ہیں۔

حارث افضل  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں