پہلی بار ہوا ہے ترقی کی رفتار کم اور افراط زر بڑھ گیا: شاہد خاقان عباسی

اسلام آباد(پبلک نیوز) سابق وزیراعظم اور مسلم لیگ کے رہنماء شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ حکومت خود کہہ رہی ہے گروتھ ریٹ 13 فیصد سے اوپر جائے گا، سمجھ سے باہر ہے ایک سال میں کیسے ہوا؟ پہلی بار ہوا ہے کہ افراظ زر بڑھ گیا۔

 

قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے مسلم لیگ ن کے رہنماء اور سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ حکومت خود کہہ رہی ہے افراط زر13 فیصد سے اُوپر جائے گا، سمجھ سے باہر ہے ایک سال میں کیسے ہوا؟ پہلی بار ہوا ہے ترقی کی رفتار کم اور افراط زر بڑھ گیا۔ گزشتہ 10 ماہ میں وہ جذبہ نظر نہیں آیا جو ہونا چاہئے تھا۔ حکومت 4 ہزار ریونیو جمع نہیں کر سکے، سمجھ سے بالاتر ہے ساڑھے5 ہزار ریونیو کیسے جمع ہو گا؟ 10 ماہ میں ایسا حال ہو گیا، 5 سال گزاریں گے تو کیا ہو گا۔

ن لیگی رہنماء شاہد خاقان عباسی نے مزید کہا کہ موجودہ بجٹ آئی ایم ایف کا ہے۔عام طور پر ماضی کے بجٹ میں ردوبدل کی جاتی ہے، موجودہ حکومت نے بجلی، گیس کی قیمتیں بڑھا دیں، نااہلی نے پاکستان کو یہاں لا کھڑا کر دیا، حکومت کی معاشی ٹیم ناکام ہو گئی، ایک سال بھی نہیں ہوا گروتھ 6 فیصد سے2 فیصد پر چلی گئی، حکومت نے نااہلی سے افراط زر اور روپے کو ڈی ویلیو کیا۔

عطاء سبحانی  3 ماه پہلے

متعلقہ خبریں