شاہد خاقان عباسی نے ایل این جی کیس میں سوالات کے جواب جمع کر دیئے

راولپنڈی(پبلک نیوز) بس آئے اور گئے، سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی نیب راولپنڈی میں کچھ دیرکی پیشی، ایل این جی کیس میں سوالوں کے جواب جمع کرائے، شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ جب بھی دوبارہ بلایا وہ حاضر ہو جائیں گے۔ جلدی واپسی سے متعلق سوال پر صحافی کو جواب دیا۔

 

ایل این جی کیس، شاہد خاقان عباسی نیب راولپنڈی میں پیش، تحقیقاتی ٹیم نے آدھے گھنٹے تک پوچھ گچھ کی۔ دوران تفتیش تحقیقاتی ٹیم نے جواب سے متعلق سوال کیا، تو شاہد خاقان عباسی بولے وہ تحریر جواب بھی ہمراہ لائے ہیں۔ وزارت پٹرولیم سے کافی ریکارڈ حاصل کر لیا۔ ریکارڈ درکار نہ ہوتا تو جواب پہلے ہی جمع کرا دیتے۔ شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ انہوں نے قومی اسمبلی کے اجلاس میں شرکت بھی کرنی ہے، جس پر نیب تحقیقاتی ٹیم کا کہنا تھا کہ جوابات کا جائزہ لے لیتے ہیں۔ ضرورت پڑی تو دوبارہ بلا لیں گے۔

 

پیشی کے بعد صحافی نے جلدی واپسی سے متعلق سوال کیا تو شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ کیا آپ کومایوسی ہوئی، بولے وہ ہمیشہ خوش رہتے ہیں۔ ٹرانسکرپٹ:آج جلدی واپسی ہو گئی، خوش ہیں؟ صحافی کا شاہد خاقان عباسی سے سوال، آپ کومایوسی تو نہیں ہوئی؟ شاہد خاقان عباسی کا جواب، ہم تو ہمیشہ خوش رہتے ہیں، سوالوں کے جواب تو ایک ہی ذات دیتی ہے، جب بلائیں گے آجائیں گے۔ پیشی سے قبل میڈیا سے گفتگو میں شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ ان کا ائیربلیو سے کوئی تعلق نہیں۔ سابق وزیراعظم کو نیب راولپنڈی نے جوابات کے لیے آخری مہلت دی تھی، ان کی پیشی کے موقع پر سکیورٹی کے سخت انتظامات بھی کیے گئے تھے۔

عطاء سبحانی  4 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں