ایل این جی کیس: شاہد خاقان کے جسمانی ریمانڈ میں 14 روز کی توسیع

 

اسلام آباد (پبلک نیوز) مسلم لیگ (ن) کے سینیئر نائب صدر شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ عدالت نے مزید 2 ہفتہ دیے ہیں، ویسے تو ایک سال میں نہیں سمجھا سکا، لیکن کوشش کروں گا کہ کیس نیب کو سمجھا سکوں۔

  

تفصیلات کے مطابق ایل این جی کیس میں سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کو احتساب عدالت کے جج محمد بشیر کے روبرو پیش کیا گیا۔ جج محمد بشیر نے نیب پراسیکیوٹر سے استفسار کیا کہ مزید کتنا ریمانڈ چاہیے۔ جس پر نیب پراسیکیوٹر نے 14 روزہ مزید جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی۔

 

دوران سماعت شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ کتنا چاہے ریمانڈ دے دیں، دوران تفتیش دستاویزات مانگ لیتے ہیں، جو سوالات پوچھ لیتے ہیں، ان کا جواب دے دیتا ہوں۔ جج محمد بشیر نے ریمارکس دیے کہ 14 روز کا ریمانڈ دے دیتا ہوں، تفتیش مکمل کرنے کی کوشش کریں۔ عدالت نے شاہد خاقان عباسی کو 29 اگست کو دوبارہ پیش کرنے کا حکم دے دیا۔

 

سماعت کے بعد شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ عدالت نے مزید 2 ہفتہ دیے ہیں، ویسے تو ایک سال میں نہیں سمجھا سکا، لیکن کوشش کروں گا کہ کیس نیب کو سمجھا سکوں۔

 

احمد علی کیف  2 روز پہلے

متعلقہ خبریں