احتساب عدالت نے لندن فلیٹس کی ملکیت کے شواہد کے بغیر فیصلہ دیا، شریف خاندان

اسلام آباد (پبلک نیوز) سابق وزیراعظم نوازشریف اور مریم نواز نے تحریری جواب جمع کرا دیا ہے۔ جس میں مؤقف اختیار کیا گیا کہ احتساب عدالت نے لندن فلیٹس کی ملکیت کے شواہد کے بغیر فیصلہ دیا۔

تفصیلات کے مطابق نواز شریف اور ان کی صاحبزادی مریم نواز کی جانب سے سپریم کورٹ میں تحریری جواب جمع کرا دیئے گئے ہیں۔ نواز شریف کی جانب سے دیئے گئے تحریری جواب میں مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ احتساب عدالت نے لندن فلیٹس کی ملکیت کے شواہد کے بغیر فیصلہ دیا۔

دونوں کے جوابات میں کہا گیا ہے کہ ریکاڑد پر ایسے کوئی شواہد نہیں آئے۔ جس سے لندن فلیٹس کی ملکیت نوازشریف اور مریم نواز کی ثابت ہوتی ہو۔ آمدن اور اثاثوں کے موازنہ کے بغیر ہی سزا سنا دی گئی۔ اس لیےاحتساب عدالت کا فیصلہ برقرار رکھا نہیں جا سکتا۔

مزید کہا گیا کہ لندن فلیٹس سے متعلق ملکیت ثابت کیے بغیر ان پر ارتکاب جرم کا سوال نہیں اٹھایا جا سکتا۔ مریم نواز نے مؤقف اختیار ہے کہ ملکیت ثابت ہو بھی جائے تب بھی جرم ثابت کرنے کے لیے نیب قانون کے تقاضے پورے کرنا ضروری ہیں۔

دریں اثنا نواز شریف اور مریم نواز نے اپنے جواب میں عدالت اعظمیٰ سے استدعا کی ہے کہ نیب کی ضمانت منسوخی کی اپیل کو مسترد کیا جائے۔ خیال رہے کہ چیف جسٹس کی سربراہی میں تین رکنی بنچ 12نومبر کو شریف فیملی کی بریت کے خلاف نیب اپیلوں کی پھر سماعت کرے گا۔

احمد علی کیف  1 ماه پہلے

متعلقہ خبریں