سیاسی حالات ساز گار نہ ہوں تو معیشت بہتر نہیں ہو سکتی: شیخ رشید

کراچی(پبلک نیوز) وفاقی وزیر ریلوے شیخ نے کہا ہے کہ ملک کوچلانےمیں کاروباری افراد کا کردار اہم ہے۔ ایک چور کو پکڑو تو پیچھے ڈاکوؤں کی لائن کھڑی ہو جاتی ہے۔ گیس قیمتوں میں اضافہ چوروں کی وجہ سے ہوا۔ ریلوے کی آمدن میں دن بدن اضافہ ہو رہا ہے۔

 

کراچی میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید کا کہنا تھا کہ آپ نے مجھے فنانس منسٹرسمجھاہواہے؟ درد کہاں ہے دوائی کس سے مانگ رہے ہو۔ مولوی اور بزنس مین کبھی خوش نہیں ہو سکتا، اگر بری حکومت چل رہی ہے تو اس میں بھی کراچی کا بھی قصور ہے۔ ضیاالحق نے مجھے کہا کہ تو بہت بولتا ہے۔ اقتدار میں ہو تو کہتے ہیں کہ آنکھ ہیما مالنی سے ملتی ہے۔ معاشرہ من حیث القوم کرپٹ ہو چکا ہے۔ شناخت شرافت نہیں دولت ہو چکی ہے۔ سیاسی حالات ساز گار نہ ہوں تو معیشت بہتر نہیں ہو سکتی۔

 

وفاقی وزیر ریلوے نے کہا کہ پٹھان کو 1350 میں پشاور سے کراچی لا رہے ہے، کیوں کہ اسکے بچے چھ ہیں، ہم پانچ طرح کے مسافروں کو ڈیل کر رہے ہیں۔ گزشتہ سال سے 4ارب روپے زیادہ آمدن ہوئی ہے، ہم سر سید ٹرین شروع کر رہے ہیں۔ پاکستان کا سینئر ترین سیاسی کارکن ہوں شیخ آدھا کاروباری ہوتا ہے، ہم کنٹینر ٹرین آج شروع کرتے ہیں، کراچی چیمبر ذمہ داری لے۔ منشا ونشا کی ڈیل ہو جائے گی گھبرائیں نہیں۔ سیاستدان مرجائے گا کچھ نہیں دے گا۔ خزانہ کسی غریب نے نہیں لوٹا۔


شیخ رشید خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وزارت میں وزیر اور سیکریٹری کے بغیر کرپشن نہیں ہوسکتی، مفاد دنیا میں سب سے بڑا رشتہ ہے۔ آئی ایم ایف کی بڑی سخت شرائط ہوں گی، مجھے کابینہ میں پسند نہیں کیا جاتا، ملک کو وحشیانہ طریقے سے لوٹا گیا۔ کیا آپکو نہیں پتہ کہ نواز شریف اور زرداری کی حکومت کرپٹ تھی۔ عمران خان کو سسٹم بدلنے کے لیے مجبوریاں ہیں۔ گیس چوروں کی وجہ سے بڑھی ہے، اس ملک کی بجلی کیوں بڑھی ہے۔ ماضی کی حکومتوں نے معیشت کو تباہ کیا۔ غریب مرنے کو تیار بیٹھا ہوا ہے۔


انہوں نے مزید کہا کہ ادویات بھی کراچی سے بڑھی ہیں۔ عمران خان 27 اپریل کو دستخط کریں گے۔ ظالم لوگ ہیں کہ جنازے پڑھا رہے ہیں ریل کی پٹری پر، کے سی آر پر تمام کمرشل تجاوزات ختم کر دیں۔ سندھ حکومت سرکلر ریلوے کی ڈیزائن فزیبلٹی مکمل کرے، ہم تجاوزات ختم کردیں گے، اگر ہمارےدورمیں۔سرکلر ریلوے نہ بنی تو زندگی بھر نہیں بنے گی۔ چائنیز نے سات ارب روپے مانگ لیا ہے، کراچی میں گیم چینج بھی منی چینج نکلتا ہے۔

 

وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید نے کہا کہ ملک کو چلانےمیں کاروباری افراد کا کردار اہم ہے، سیاسی استحکام کے بغیر معاشی استحکام ممکن نہیں، ملک میں شناخت شرافت نہیں دولت بن گئی ہے، معاشرے میں پیسے کی فراوانی سے کرپشن بڑھتی ہے، باتیں کرنا آسان اور کام کرنامشکل ہوتا ہے، آئی ایم ایف کےعلاوہ کوئی آپشن نہیں، سی پیک میں ریلوے کے منصوبے بھی شامل ہیں، ریلوے کی آمدن میں دن بدن اضافہ ہو رہا ہے۔

عطاء سبحانی  5 روز پہلے

متعلقہ خبریں