محکمہ اطلاعات سندھ میں کرپشن ریفرنس، شرجیل میمن کی درخواست ضمانت منظور

کراچی(حمزہ گیلانی) سابق صوبائی وزير اطلاعات شرجيل انعام ميمن کو ڈيڑھ برس بعد رہائی کا پروانہ مل گيا۔ سندھ ہائیکورٹ نے درخواست ضمانت مظور کر لی۔ سندھ ہائيکورٹ نے محفوظ فيصلہ سنا ديا۔ شرجيل ميمن کے وارنٹ گرفتاری معطل کر ديئے گئے۔


محکمہ اطلاعات سندھ ميں کرپشن کا الزام، شرجيل ميمن کو ڈيڑھ برس بعد رہائی کا پروانہ مل گيا۔ پونے 6 ارب روپے کرپشن ریفرنس میں سندھ ہائیکورٹ نے سابق صوبائی وزیر شرجیل میمن کی درخواست ضمانت منظور کر لی۔ عدالت نے مچلکے جمع کرانے کا حکم دے دیا۔ عدالت نے شرجیل انعام میمن کی درخواست ضمانت پر گذشتہ سماعت پر فیصلہ محفوظ کیا تھا جو آج سنایا گیا۔ عدالت نے شرجیل انعام میمن کی درخواست ضمانت 50 لاکھ کے عوض منظور کی۔ ریفرنس میں 17 ملزمان نامزد ہیں، ملزمان کیخلاف ریفرنس احتساب عدالت میں زیر سماعت ہے، ریفرنس میں سابق سیکرٹری انفارمیشن ذوالفقار شلوانی سمیت 13 ملزمان جیل میں ہیں۔

شرجیل میمن نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ خوش ہوں 21 ماہ بعد عدالت نے ضمانت منظور کر لی ہے، مجھے عدالتوں پر مکمل اعتماد ہے، نام ای سی ایل میں شامل ہے میں بھاگ نہیں رہا۔ نيب کے مطابق شرجيل ميمن نے بطور وزير اختيارات سے تجاوز کيا۔ اشتہارات کی مد ميں نجی چينلز کو رقم جاری کی، جس ميں پونے چھ ارب سے زائد کی خرد برد کی گئی۔ سندھ ہائيکورٹ نے چيئرمين نيب کی جانب سے جاری کيا گيا۔ شرجيل ميمن کا وارنٹ گرفتاری بھی معطل کر ديا۔ عدالتی حکم پر نام ای سی ایل برقرار رکھا گیا ہے۔ شرجيل ميمن کے وکيل کی جانب سے عدالت کو مکمل تعاون کی يقين دہانی کرادی گئی۔

عطاء سبحانی  3 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں