سفارتی تعلقات میں کمی کے باوجود کرتارپور منصوبے پر کام جاری رہے گا، ترجمان دفتر خارجہ

 

اسلام آباد (پبلک نیوز) ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر فیصل نے کہا ہے کہ بھارت نے مقبوضہ کشمیر کو دنیا کی سب سے بڑی جیل میں تبدیل کر دیا ہے۔ مقبوضہ کشمیر میں مظالم کا عالمی برادری نوٹس لے رہی ہے۔ ہم مسلمان ہیں، لفظ خوف ہماری لغت میں نہیں ہے۔ کشمیریوں کی سیاسی، اخلاقی اور سفارتی حمایت جاری رہے گی۔

 

دفتر خارجہ میں ہفتہ وار پریس بریفنگ میں ان کا کہنا تھا کہ بھارت نے مقبوضہ کشمیر کو دنیا کی سب سے بڑی جیل میں تبدیل کر دیا ہے۔ وزیر اعظم عمران خان نے بھارت کے غیر قانونی اقدامات کے خلاف تمام آپشنز استعمال کرنے کی ہدایت کی ہے۔ پاکستان بھارت کا یہ موقف مسترد کرتا ہے کہ مقبوضہ کشمیر اس کا داخلی معاملہ ہے۔ بھارتی فیصلے کے خلاف عالمی عدالت انصاف میں جانے کا جائزہ لیا جا رہا ہے۔

 

ترجمان دفتر خارجہ کا ایک سوال کے جواب میں کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیر میں مظالم کا عالمی برادری نوٹس لے رہی ہے۔ ہم مسلمان ہیں، لفظ خوف ہماری لغت میں نہیں ہے۔ بھارت 27 فروری کو یاد رکھے، جارحیت کے جواب میں کوئی گنجائش نہیں دی جائے گی۔

 

ڈاکٹر فیصل کا کہنا تھا کہ امریکہ کی نائب معاون وزیر خارجہ ایلس ویلز کو صورتحال سے آگاہ کر دیا گیا ہے۔ امریکہ کے ساتھ اعلی سطح پر بھی رابطے کیے جائیں گے۔ کشمیریوں کی سیاسی، اخلاقی اور سفارتی حمایت جاری رہے گی۔ حافظ سعید کی رہائی سے متعلق سوال پر ان کا کہنا تھا کہ حافظ سعید کی رہائی کے بارے میں اطلاعات درست نہیں ہیں۔

 

احمد علی کیف  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں