اسٹیٹ بینک نے بنیادی شرح سود میں 1 فیصد اضافہ کردیا

 

کراچی (پبلک نیوز) اسٹیٹ بینک نے بنیادی شرح سود میں 1 فیصد کا اضافہ کردیا ہے۔ شرح سود 13 اعشاریہ 25 فیصد ہوگئی۔ گورنر اسٹیٹ بینک نے نان آئل کرنٹ خسارہ صفر کرنے کا بھی دعویٰ کر دیا۔ آئندہ 2 ماہ کے لیے شرح سود کا اعلان کردیا گیا۔

 

 

تفصیلات کے مطابق گورنر اسٹیٹ بینک نے خطر کی گھنٹی بجا دی۔ آئندہ 2 ماہ کے دوران مہنگائی مزید بڑھے گی۔ اسٹیٹ بینک کی آئندہ 2 ماہ کے لیے نئی مانیٹری پالیسی کا اعلان کر دیا۔ شرح سود میں 1 فیصد اضافہ کر دیا گیا۔  جس سے شرح سود اب 13.25 فیصد ہو گی۔

 

گورنر اسٹیٹ بینک کا کہنا تھا کہ بجٹ میں بجلی، گیس و دیگر سیکٹر میں قیمتیں بڑھنے کی وجہ سے ریٹ میں اضافہ ہو گیا ہے۔ اشیائے ضروریات کی قیمتیں بڑھنے کا امکان ہے۔

 

گورنراسٹیٹ بینک نے نان آئل کرنٹ خسارہ صفر کرنے کا بھی دعوی کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ شرح سود بڑھنے سے ڈالریزیشن کو کم کرنے میں مدد ملے گی۔ سیونگ سرٹیفیکٹ کی رقم میں منافع زیادہ ہو گا۔ اب فیصلہ عوام نے کرنا ہے کہ وہ اب سیونگ ڈالر میں یا روپیہ میں کریں گے۔

احمد علی کیف  1 ماه پہلے

متعلقہ خبریں