زیب النساء نے دستکاری اور مصوری کو اپنی طاقت بنا لیا

اسلام آباد (حرا مصطفیٰ) جب ہنر طاقت بن جائے تو مالی پریشانی خود قدم پیچھے ہٹا لیتی ہے۔ ایسی ہی ایک مثال مضبوط اور ہنرمند خاتون زیب النساء کی ہے جس نے دستکاری اور مصوری کے ہنر کو اپنی طاقت بنالیا ہے۔

اگر حوصلے ہوں بلند اور لگن سچی ہو تو کیا ہی کوئی طاقت شکست دے۔ ایسی ہی عمدہ مثال اپنے ہنر کو بنایا اپنی طاقت بنانے والی زیب النساء ہیں۔ جوان بیٹے کی موت نے آن لیا۔ مالی حالات سازگار نہ رہے۔ تب بھی صبر و استقامت سے حالات کی سنگینیوں کا خندہ پیشانی سے سامنا کیا۔

لوگوں کے آگے ہاتھ نہیں پھیلائے بلکہ سلائی کڑھائی، ٹائی اینڈ ڈائی، گلاس پینٹنگز اور دستکاری سے روزی کما کر اپنی گزر بسر کی۔ زیب انساء کی بھتیجی کا کہنا ہے کہ بچپن سے ہی خالہ کو محنت کرتے دیکھا۔

بلاشبہ خواتین کا معاشرہ میں کلیدی کردار ہے جسے کسی صورت نظر انداز نہیں کیا جا سکتا۔

احمد علی کیف  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں