سرکاری تعلیمی اداروں میں ملک کے معمار آئس نشہ میں مبتلا

 

جہلم(غلام قادر) جہلم کے سرکاری تعلیمی اداروں میں ملک کے معمار آئس نشہ میں مبتلا ہونے لگے ہیں۔ جبکہ پولیس بااثر منشیات فروشوں  کے سامنے بے بس ہے۔ گرلز ہاسٹل میں دو طالبات آئس نشہ استعمال کرنے میں مصروف تھیں۔

 

جہلم کے سرکاری تعلیمی اداروں میں تعلیم حاصل کرنے والے ملک و قوم کے معماروں کا مستقبل تاریک ہونے لگا۔ نوجوان نسل منشیات کی عادی ہونے لگی۔ آئس نشہ جیسی  لعنت کا استعمال جاری ہے۔ جہلم کے مختلف علاقوں میں جاری منشیات فروشی کا دھندہ اب سرکاری تعلیمی اداروں میں پہنچ چکا ہے۔

گرلز ہاسٹل میں دو طالبات آئس نشہ کا بے دریغ استعمال کرنے میں مصروف تھی جسکی فوٹیج پبلک نیوز کو موصول ہوگئی۔ جس میں واضح طور پر دیکھا جا سکتا ہے کہ کس طرح نوجوان لڑکیاں آئس نشہ میں دھت ہورہی ہیں۔

 

ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ آئس نشہ یونیورسٹی سمیت دیگر سرکاری تعلیمی اداروں میں پہنچانے میں ایک لڑکی اور خواجہ سراؤں کا اہم کردار ہے۔ شہریوں نے ڈی پی او جہلم سے مطالبہ کیا ہے کہ آئس نشہ کی فروخت کرنے والے گروہ کے خلاف سخت کارروائی کی جائے۔

احمد علی کیف  1 ماه پہلے

متعلقہ خبریں