سپریم کورٹ نے ٹی وی اینکر شاہد مسعود کی درخواست ضمانت منظور کر لی

اسلام آباد(پبلک نیوز) سپریم کورٹ میں ٹی وی اینکر شاہد مسعود کی درخواست ضمانت منظور، چیف جسٹس منصور احمد ملک کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے کیس کی سماعت کی۔ عدالت نے 5 لاکھ کے ضمانتی مچلکوں کے عوض ملزم کی ضمانت منظور کر لی۔


جسٹس منظور احمد کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے دو رکنی بنچ نے ڈاکٹر شاہد مسعود کی درخواست ضمانت کی سماعت کی، جسٹس منظور احمد ملک نے کیس ریکارڈ کا جائزہ لینے کے بعد ڈاکٹرشاہد مسعود کی درخواست ضمانت مںظور کر لی۔ عدالت نے کہا کہ مقدمے میں نامزد تینوں ملزموں کی ضمانت پہلے ہی ٹرائل کورٹ مںظور کر چکا ہے۔

 

ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے تصدیق کی ہے کہ 2015 میں رجسٹرڈ ہونے والے مقدمے میں درخواست گزارکا نام نہیں۔ عبوری چالان میں بھی شاہد مسعود کا نام نہیں ہے۔ دونوں کپمنیوں کے ساتھ درخواستگزاریا خاندان کے کسی فرد کا کوئی تعلق نہ تھا سپریم کورٹ نے ڈاکٹر شاہد مسعود کی پانچ لاکھ روپے عدالتی مچلکوں کے عوض ضمانت مںظورکر لی۔

 

واضع رہے کہ اسلام آباد ہائیکورٹ نے 23 نومبر 2018ء کو شاہد مسعود کی درخواست ضمانت مسترد کر دی تھی، جس کے بعد کمرہ عدالت کے باہر سے انہیں ایف آئی اے نے گرفتار کر لیا۔ ٹی وی اینکر شاہد مسعود پر الزام عائد ہے کہ انہوں نے بحیثیت ایم ڈی پی ٹی وی جعلی کمپنی کے ساتھ کرکٹ میچز کے نشریاتی حقوق کا معاہدہ کیا تھا۔ معاہدے کے وقت 3 کروڑ 70 لاکھ کی فوری ادائیگی کی گئی، کمپنی لاہور میں دیگوں اور کیٹرنگ کا کام کرتی تھی۔

عطاء سبحانی  3 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں