سپریم کورٹ نے کراچی سے 15 دن میں تجاوزات ختم کرنے کا حکم دے دیا

کراچی (پبلک نیوز) سپریم کورٹ نے کراچی بھر سے تجاوزات ختم کرنے کا حکم دے دیا۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ عدالت کا حکم موجود ہے۔ کسی کی اجازت کی ضرورت نہیں، امن و امان کی صورت حال کو قانون کے مطابق نمٹا جائے۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں شہر میں تجاوزات سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی، میئر کراچی اور ایڈیشنل آئی جی پیش ہوئے۔ سپریم کورٹ نے شہر بھر سے تجاوزات ختم کرنے کا حکم دے دیا۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ عدالت کا حکم موجود ہے، کسی کی اجازت کی ضرورت نہیں، چیف جسٹس نے ایڈیشنل آئی جی سے استفسار کیا کہ تجاوزات آپ ختم کرائیں گے، اپنا پلان بتائیں ایڈیشنل آئی امیر شیخ نے کہا ہم مکمل تعاون کے لی تیار ہیں۔

میئر کراچی وسیم اختر نے کہا کہ ایمپریس مارکیٹ 70 فیصد صاف ہو چکی ہے، چیف جسٹس نے کہا صرف ایمپریس مارکیٹ نہیں اطراف کا علاقہ بھی صاف کرائیں۔ میئر کراچی نے عدالت کو صدر مکمل طور پر صاف کرانے کی یقین دہانی کرائی۔ عدالت نے کنٹونمنٹ بورڈز اور رینجرز کو بھی انتظامیہ سے تعاون کی ہدایت کر دی، کہا امن و امان کی صورت حال کو قانون کے مطابق نمٹا جائے، تمام فٹ پاتھوں سے تجاوزات ختم کی جائیں۔

 میئر کراچی کا کہنا تھا کہ رفاعی ادارے فٹ پاتھ پر غریبوں کو کھانا کھلاتے ہیں، انہیں بھی ہٹا دیں؟ چیف جسٹس نے کہا آپ غریبوں کو کھانا کھلانے کے لیے متبادل جگہ دیں۔ میئر کراچی نے ایک بار اختیارات کا رونا رویا کہا ان کے پاس میجسٹریل پاور نہیں ہے۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ میئر کراچی وسیم اختر کو شہر صاف کرانے کا ٹاسک دیا جائے، سپریم کورٹ نے تجاوزات کے خاتمہ کے لیے جوائنٹ ٹیم کو 15 دن کی مہلت دے دی۔

حارث افضل  3 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں