لفظ دہشتگردی کی تعریف کاتعین کرنے کیلئے سپریم کورٹ میں لارجر بنچ تشکیل

اسلام آباد(پبلک نیوز) لفظ دہشتگردی کی تعریف کاتعین کرنے کیلئے سپریم کورٹ میں لارجر بنچ تشکیل دے دیا گیا، چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ 7 رکنی لارجر بنچ کی سربراہی کریں گے، چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ 1997 سے اب تک یہ طے نہیں ہوا کونسا کیس دہشت گردی کے زمرے میں آتا ہے۔

 

لفظ دہشتگردی کی تعریف کاتعین کرنے کے معاملہ، سپریم کورٹ نے دہشت گردی کے تعریف کے تعین کیلئے لاجر بنچ تشکیل دے دیا،،چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ سات رکنی لارجر بینچ کی سر براہی کریں گے۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ سات رکنی لارجر بینچ دہشت گردی کی حتمی تعریف پر فیصلہ دے گا۔

 

چیف جسٹس ریمارکس میں کہا کہ انیس سو ستانوے سے اب تک یہ طے نہیں ہوا کونسا کیس دہشت گردی کے زمرے میں آتا ہے۔ دہشت گردی کی تعریف کے لیے سات رکنی بینچ بنا دیا ہے۔ چیف جسٹس نے کہا کہ جھوٹی گواہی کی قانونی حیثیت پر بھی فیصلہ آج جاری کر دیا جائے گا۔ آج سے یہ طے ہو جائے گا کہ جھوٹے گواہ کی پوری گواہی مسترد ہو گی۔

عطاء سبحانی  4 ماه پہلے

متعلقہ خبریں