پاکستان، آئی ایم ایف کے درمیان آج مذاکرات کا آخری دور ہو گا

اسلام آباد(پبلک نیوز) پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان مذاکرات کا آخری دور آج ہو گا، بیل آوٹ پیکج کے بدلے آئی ایم ایف کی سخت شرائط مانیں یا نہیں وزارت خزانہ حکام نے سر جوڑ لئے۔ آئی ایم ایف کا روپے کی قدر میں مذید کمی کا مطالبہ کر دیا۔

 

وزارت خزانہ سوچ بچار کر رہی ہے کہ آئی ایم ایف کی کڑی شرائط مانے یا نہیں۔ آئی ایم ایف نے سخت شرائط وزارت خزانہ حکام کے سامنے رکھ دی ہیں۔ شرح سود آٹھ اشارعیہ پانچ سے بڑھا کر دس فیصد کرنے کا مطالبہ کر دیا ہے۔ آئی ایم ایف نے نجکاری پروگرام پر جلد عملدرآمد کرنے کی شرط عائد کر دی۔

متعلقہ خبر:بیل آوٹ پیکج کیلئے آئی ایم ایف کی جانب سے مزید شرائط سامنے آگئیں

ذرائع کے مطابق آئی ایم ایف نے پاکستان کو ایف بی آر میں ترامیم کرنے اور فائلرز کی تعداد بڑھانے کی شرط عائد کر دی۔ آئی ایم ایف کا روپے کی قدر میں مزید کمی کا مطالبہ کر دیا۔ 160 ارب روپے سے زائد کے نئے ٹیکس لگانے کی تجویز دے دی ہے۔ آئی ایم ایف نے شرح سود بڑھانے کی تجویز بھی دے دی۔

 

آئی ایم ایف نے پاور سیکٹر کا گردشی قرضہ رواں مالی سال تقریباً تین سو ارب روپے کم کرنے کی ہدایت کی ہے ۔ پاور سیکٹر کے گردشی قرضہ میں کمی کیلئے سکوک بانڈز جاری کئے جائیں گے۔ آج پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان مذاکرات کا آخری روز ہو گا۔

عطاء سبحانی  4 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں