بلاول بھٹو کی قیادت میں پیپلز پارٹی کا 'کاروان بھٹو' ٹرین مارچ کراچی سے روانہ

کراچی (پبلک نیوز) پیپلزپارٹی نے بھرپور سیاسی قوت کا مظاہرہ کرنے کی ٹھان لی۔ بلاول بھٹو زرداری کی قیادت میں 'کاروانِ بھٹو' ٹرین مارچ کراچی کے کینٹ اسٹیشن سے روانہ ہوگیا جو کل لاڑکانہ پہنچ کر اختتام پذیر ہوگا۔

 

تفصیلات کے مطابق چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری کا میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ کارکنان کی آمد اور ان کے استقبال پر شکریہ ادا کرتا ہوں۔ یہ کاروان بھٹو کراچی سے لاڑکانہ تک ہوگا۔ عوام کا سیلاب ہمارے ساتھ ہے۔ گڑھی خدا بخش میں ہم بھٹو کو خراج عقیدت پیش کریں گے۔ بھٹو کے نام کو عوام کو دلوں سے کوئی نہیں نکال سکتا، ذوالفقار علی بھٹو نے شہادت قبول کی مگر سر نہیں جھکایا۔ ان کا کہنا تھا کہ "بھٹو کل بھی زندہ تھا، آج بھی بھٹو زندہ ہے"۔

کاروان بھٹو ٹرین ایک لگژری اسپیشل سیلون اور ایک اے سی سلیپر سمیت 14 ڈبوں پر مشتمل ہے، ٹرین میں 8 اکانومی کلاس بوگیاں اور دو پاور پیک انجن بھی شامل جبکہ سیکورٹی کے لیے گارڈز کی دو بوگیاں بھی کاروان ٹرین کا حصہ ہیں۔ سپیشل سیلون میں آرام کے لیے ایک بیڈ، بیٹھنے کے لیے صوفہ سیٹ، گرمی سے بچاؤ کے لیے ایئر کنڈیشنر لگایا گیا ہے جبکہ سیلون میں الگ واش روم کی سہولت بھی موجود ہو گی۔ ٹرین میں اجلاس کے لیے میٹنگ روم، کچن، اور دیگر تمام سہولیات بھی موجود ہیں۔

 

ٹرین مارچ کے دوران بلاول بھٹو زرداری راستے میں 25 مختلف مقامات پر خطاب کریں گے اور کارکنان کا لہو گرمائیں گے۔

حارث افضل  3 ماه پہلے

متعلقہ خبریں