فیصل آباد میں ہائیکورٹ بنچ کیلئے احتجاج، وکلا کا سائلین پر لاتوں اور گھوسوں سے تشدد

فیصل آباد (پبلک نیوز) شہر میں ہائیکورٹ بنچ کے قیام کے لیے وکلا کا احتجاج جاری، احاطہ عدالت میں داخل ہونے پر وکلا نے سائلین کو تشدد کا نشانہ بنا ڈالا۔ وکلا گروپ نے سائلین کو لاتوں اورگھونسوں کا استعمال کرتے ہوئے بے دردی سے پیٹا۔

لاہور ہائی کورٹ کے علاقائی بینچز کے مطالبہ پر وکلا سراپا احتجاج ہیں۔ اسی معاملے پر ضلعی عدالتوں کی تالابندی بھی کی جارہی ہے۔ فیصل آبادمیں ہائیکورٹ بنچ کے قیام کے لیے وکلا کا احتجاج جاری تھا۔ انصاف کے منتظر سائلین عدالت کے اندرجانے کے لیے گیٹ سے داخل ہی ہوئے تو وکلا گروپ آپے سے باہر ہو گیا اور سائلین پر دھاوا بول دیا۔

وکلا گروپ نے سائلین کو بری طرح تشدد کا نشانہ بنایا۔ لاتوں، گھونسوں سے سائلین کو بے دردی سے پیٹا۔  قانون کے رکھوالے اور انسانی حقوق کے علمبردار وکلا برادری نے قانون کی دھجیاں بکھیرتے ہوئے عوام پر تشدد کر کے ایک دفعہ پھر وکلا گردی بے نقاب کر دی۔

وکلا گروپ کی جانب سے جاری احتجاج کے باعث عدالتی امور ٹھپ ہو کر رہ گئے ہیں۔ وکلا برادری نے عدالتوں کے باہر کرسیاں ٹینٹ لگا کر سائلین کا داخلہ مکمل طور پر بند کر رکھا ہے۔

سیشن کورٹ فیصل آبادمیں روزانہ 10سے 12 ہزار مقدمات کی سماعت ہوتی ہے جو وکلا کے احتجاج کے باعث مقدمات کی سماعت تاخیر کا شکار ہے۔

احمد علی کیف  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں