بنگلا دیش میں عام انتخابات کیلئے ووٹنگ جاری، سیکیورٹی کے سخت انتظامات

ڈھاکہ(پبلک نیوز) بنگلا دیش میں عام انتخابات کے لیے ووٹنگ،عوامی لیگ کی حسینہ واجد چوتھی بار وزارت عظمیٰ کیلئے میدان میں ہیں، 10کروڑ ووٹر اپنا حق رائے دہی استعمال کریں گے، سیکیورٹی کے سخت انتظامات،6لاکھ اہلکار تعینات کئے گئے ہیں۔

 

عام انتخابات کیلئے بنگلادیش میں ووٹنگ کا عمل شروع ہو گیا، ووٹنگ کیلئے ملک بھر میں 40ہزار پولنگ اسٹیشن قائم کیئے گئے ہیں۔ عام انتخابات کیلئے سخت سکیورٹی کے انتظامات کیئے گئے ہیں، 6لاکھ سیکیورٹی اہلکار تعینات کر دیئے گئے ہیں۔ ہفتے کی شام سے ملک بھر کے مختلف شہروں میں موبائل فون سروس معطل کر دی گئی ہے۔

 

نیوز ذرائع کے مطابق عام انتخابات کے دوران پرتشدد واقعات میں 2 افراد ہلاک ہو گئے ہیں، جس پر پولیس کے مطابق بشخالی میں پولیس کی فائرنگ سے اپوزیشن کارکن ہلاک ہوا، جبکہ رنگامتی میں حکمران جماعت کا کارکن تشدد سے مارا گیا۔ عام انتخابات کے اعلان کے بعد اپوزیشن کے 15 ہزار سے زائد کارکن گرفتار کیے جا چکے ہیں، جبکہ اپوزیشن کے 17رہنماؤں کو عدالتوں کی جانب سے نااہل قرار دیا جاچکا ہے۔

واضع رہے کہ بنگلادیش نیشنلسٹ پارٹی کی زیر قیادت قائم اتحاد کاعوامی لیگ کی حسینہ واجد سے مقابلہ ہے اور 300 نشستوں والی پارلیمان میں وزیر اعظم حسینہ واجد کو چوتھی بارحکومت بنانے کیلئے 151نشستیں درکار ہیں۔ دوسری جانب حزب اختلاف کی رہنماء خالدہ ضیا بدعنوانی کے الزامات کی بنا پر جیل میں ہیں، انتخابی مہم کے آغاز کے بعد بی این پی کے ہزاروں کارکنان کو پولیس نے گرفتار کر لیا تھا، اس کے بعد اپوزیشن جماعتوں نے ان گرفتاریوں کو عام انتخابات پر اثرانداز ہونے کی کوشش قرار دے دیا تھا۔

عطاء سبحانی  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں