بارشوں سے گرمی کی لہر میں کمی وہیں پانی آفت کی شکل اختیار کرگیا

 

پبلک نیوز: حالیہ بارشوں نے گرمی کی لہر کو جہاں کم کیا وہیں پر پانی آفت کی شکل اختیار کر گیا۔ مون سون کی طوفانی بارشوں سے برساتی نالوں میں طغیانی آگئی۔ شہری علاقوں میں سیلابی صورت حال سے انسانی جانوں، املاک اور فصلوں کو نقصان پہنچنے کا خطرہ ہے۔

 

ملک بھر میں چھٹی کے روز مجموعی طور پر موسم گرم اور حبس کا راج رہا۔ کشمیر، بالائی علاقوں، ہزارہ، کوہاٹ، پنجاب، اسلام آباد، وسطی پنجاب، ژوب، ڈی جی خان، بہاولپور، میر پور خاص میں کہیں بادل تو کہیں رم جھم ہوئی۔ بعض علاقوں میں مون سون کے دوسرے سپیشل کا آغاز ہو گیا۔ محکمہ موسمیات نے ملک کے بیشتر علاقوں میں مزید بارش کی پیش گوئی کردی۔

 

ڈیرہ غازی خاں میں دریائے سندھ میں طغیانی کے باعث جکھڑا امام شاہ کے مقام پر پرانا سپر بند ٹوٹ گیا۔ سیلابی صورت حال کے باعث جہاں املاک اور فصلوں کو نقصان پہنچا وہیں مقامی آبادی نقل مکانی پر مجبور ہے۔

 

نوشہرہ فیروز میں مورو کے قریب روہڑی کینال میں بھی 100 فٹ گہرا شگاف پڑ گیا۔ کئی ایکڑ پر کھڑی فصلیں زیر آ ب آ گئی۔ پانی نزدیکی دیہات میں داخل شروع ہو گیا۔

 

اگر دیگر دنیا میں موسم کی بات کریں تو، بھارتی ریاست آسام اور بہار میں بھی بارشوں نے تباہی مچا دی۔ سیلاب، لینڈ سلائٹڈنگ اور دیگر واقعات میں ہلاکتوں کی تعداد 142 تک پہنچ گئی۔ بھارتی میڈیا کے مطابق طوفانی بارشوں سے بستیاں تباہ، شمالی مشرقی ریاست کیرالہ میں 10 لاکھ افراد کے متاثر ہونے کا خدشہ ہے۔

احمد علی کیف  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں