اسد عمر کے بعد وزارت خزانہ کس کو ملے گی؟ نام سامنے آ گئے

کپتان عمران خان کی ٹیم کے اہم کھلاڑی نے کھیلنے سے انکار کر دیا۔ جس کے بعد ٹیم میں کھلبلی مچ گئی۔ پاکستان میں پہلی بار اقتدار میں آنے والی جماعت کے لیے اس اعلان کو سب سے بڑی ناکامی قرار دیا جا رہا ہے۔

اسد عمر کے ہاتھ کھڑے کرنے کے بعد وزارت خزانہ کا قلمدان کون سنبھالے گا یہ اس وقت کا سب سے بڑا ایشو بن چکا ہے۔ مختلف نام سامنے آ رہے ہیں جبکہ قیاس آرائیاں بھی شروع ہو چکی ہیں۔ تاہم ابھی تک حتمی طور پر کوئی بھی نام سامنے نہیں آیا۔

مزید پڑھیں: وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر نے وزارت چھوڑنے کا فیصلہ کر لیا

ذرائع کے مطابق شوکت ترین کو مشیر خزانہ مقرر کیا جا سکتا ہے کیونکہ وہ پہلے وزیر خزانہ بھی رہ چکے ہیں۔ جبکہ شوکت ترین کی جانب سے انکار کی معلومات بھی ہیں۔

اسد عمر کے بعد وزیر خزانہ بننے کے لیے سامنے آنے والے امیدواروں میں سابق وزیر خزانہ ڈاکٹر حفیظ پاشا، سلمان شاہ اور اسٹیٹ بینک کے سابق گورنر عشرت حسین شامل ہیں۔ خیال رہے کہ عشرت حسین ادارہ جاتی اصلاحات اور کفایت شعاری کے اس وقت مشیر بھی ہیں۔

پڑھنا نہ بھولیں: کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ 9 ماہ کی کم ترین سطح پر آ گیا

 سابق گورنر اسٹیٹ بینگ شمشاد اختر کو بھی وزیر خزانہ بنایا جا سکتا ہے۔ وزیراعظم عمران خان کی جانب سے سابق گورنر اسٹیٹ بینک شمشاد اختر سے ملاقات بھی کی گئی تھی۔

ذرائع کے مطابق وفاقی وزیر برائے پاور ڈوژن عمر ایوب کو بجٹ 2019-20 کے لیے وزیر خزانہ کا اضافی چارج دیا جائے گا جو بجٹ کے بعد واپسی لے لیا جائے گا۔

احمد علی کیف  1 ماه پہلے

متعلقہ خبریں