ٹنڈوالہ یار: ینگ ڈاکٹرز کی جانب سے مطالبات کی منظوری کیلئے احتجاج جاری

ٹنڈوالہ یار(عبدالرشید جعفری) ینگ ڈاکٹرز کا دوسرے روز بھی او پی ڈی کا بائیکاٹ جاری، مریضوں کا کہنا ہے ڈاکٹرز کے بائیکاٹ کے باعث بہت پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے، جبکہ ہسپتال میں ڈاکٹرز مطالبات کی منظوری کے لیے پلے کارڈز اٹھائے احتجاج کر رہے ہیں۔

 

ینگ ڈاکٹرزاتحاد کی جانب سے مطالبات کی منظوری کے لیے ٹنڈوالہ یار، نصرپور اور چمبڑ میں دوسرے روز بھی او پی ڈی کا بائیکاٹ جاری ہے، ڈاکٹرز کے احتجاج کے باعث دور دراز علاقوں سے علاج کے لیے آنے والے مریضوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

 

مریضوں کی جانب سے انتظار کیا جا رہا ہے کہ کب ڈاکٹرز کا بائیکاٹ ختم ہو گا اور کب علاج معالجے کا عمل شروع ہو گا جبکہ ٹنڈوالہ یار سول ہسپتال میں پلے کارڈ اٹھائے ڈاکٹرز مطالبات کی منظوری کے لیے احتجاجی مظاہرہ کررہے ہیں اور نعرے بازی بھی کی جا رہی ہے۔

 

اس موقع پر موجود ڈاکٹر صابر قائم کا کہنا ہے کہ سندھ کے ڈاکٹرز کے ساتھ محکمہ صحت نے سوتیلی ماں جیسا سلوک رکھا ہوا ہے۔ مریضوں نے شکوہ کیا ہے کہ ہر مریض کو ایک ہی دوا فراہم کی جاتی ہے چاہے وہ کسی بھی مرض میں مبتلا ہو، لیکن ڈاکٹروں کے بائیکاٹ کی وجہ سے آج وہ بھی نہیں مل رہی۔

عطاء سبحانی  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں