پی ایم ڈی سی میں من پسند لوگوں کی تعیناتی کا انکشاف

اسلام آباد (ضمیر حیدر) پبلک نیوز کے پروگرام خبر گرم ہے میں بڑا انکشاف، پی ایم ڈی سی میں من پسند لوگوں کی تعیناتی کا انکشاف، معاملہ ایف آئی اے کے سپرد۔ اٹھارویں گریڈ افسر کی کامرس منسٹری سے پی ایم ڈی سی میں ڈیپوٹیشن۔ پی ایم ڈی سی نے ہیلتھ منسٹری سے اجازت لیے بغیر ہی تبادلہ کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق پبلک نیوز کے پروگرام خبر گرم ہے میں بڑا انکشاف سامنے آیا ہے۔ پی ایم ڈی سی میں من پسند لوگوں کی تعیناتی کی گئی۔ معاملہ ایف آئی اے کے سپرد کر دیا گیا۔ اٹھارویں گریڈ افسر کی کامرس منسٹری سے پی ایم ڈی سی میں ڈیپوٹیشن کی گئی۔

پی ایم ڈی سی نے ہیلتھ منسٹری سے اجازت لیے بغیر ہی تبادلہ کر دیا۔ قانون کے مطابق ہیلتھ منسٹری اور اسٹبلشمنت ڈویژن کی اجازت کے بغیر ڈیپوٹیشن غیر قانونی ہے۔

کامرس منسٹری نے ہیلتھ منسٹری کی اجازت کے بغیر ڈیپوٹیشن کا این او سی کیسے جاری کیا؟ بیوروکریسی میں من پسند تبادلوں، من مرضیاں اور کرپشن کا خاتمہ کیسے ممکن؟

احمد علی کیف  3 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں