بحیرہ احمر:ڈوبتے جہاز میں 6پاکستانیوں کی جان خطرے میں

ڈوڈوما ( ویب ڈیسک ) بحیرہ احمر میں تنزانیہ کا ایک بحری جہاز ڈوبنے کے قریب ہے اس میں پھنسے میں عملے کی زندگیاں خطرے میں ہیں جن میں 6پاکستانی بھی شامل ہیں جن کا تعلق کراچی سے ہے۔

سماجی رہنما انصار برنی نے اپنے سوشل میڈیا اکائونٹ میں ایک ٹویٹ میں مدد کی اپیل کرتے ہوئے لکھا ہے کہ مہر نامی جہاز کے چھ پاکستانی کریو ممبران ریڈ بحیرہ احمر میں پھنسے ہوئے ہیں جن کی مدد کیلئے اپیل ہے۔ جہاز میں پھنسے ہوئے عملے کے ممبران نے انصار برنی ٹرسٹ سے رابطہ کیا ہے اور مدد کی اپیل کی ہے۔

اس حوالے سے سوشل میڈیا پر انصار برنی ٹرسٹ کی طرف سے جاری معلومات میں بتایا گیا ہے کہ پاکستانی عملے پر مشتمل شپ مہر جس پر تنزانیہ کا پرچم لگا ہوا ہے وہ کئی دنوں سے سعودی عرب اور سوڈان کے درمیان بحیرہ احمر میں پھنسا ہوا ہے۔جہاز پر کھانا اور پانی ختم ہو چکا ہے اور جہاز کا عملہ سمندری پانی پینے پر مجبور ہے ٗ جہاز کسی بھی وقت ڈوب سکتا ہے اور جہاز میں موجود عملے کی جانوں کو شدید خطرہ ہے۔

جہاز میں موجود دلدار خان کے بیٹے اسد اللہ کا کہنا ہے کہ تمام افراد جہاز میں بحیثیت لوڈر کام کرتے ہیں ٗ جہاز کا انجن پندرہ دن سے سمندر میںبند ہے ٗایک ہفتے سے جہاز میں کھانے پینے کا سامان بھی ختم ہو چکا ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں