شفقت محمود ایک بار پھر ٹویٹر پر چھا گئے

ویب ڈیسک: تعلیمی اداروں کے متعلق فیصلے کے بعد شفقت محمود ٹویٹر پر ٹاپ ٹرینڈ بن گئے۔

سوشل میڈیا صارفین نے دلچسپ میمز کے ذریعے این سی او سی اجلاس میں ہونے والے فیصلوں کے متعلق رائے دی۔ بنائی جانے والی میمز میں دیکھا جاسکتا ہے کہ پہلی سے آٹھویں جماعت تک کے طلبہ فیصلے پر خوشی کا اظہار کر رہے ہیں کیونکہ ان جماعتوں کے لیے تعلیمی اداروں کو  بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ جبکہ دوسری جانب بڑی کلاسز کے امتحانات لینے کا فیصلہ کیا ہے، اس طلبہ کی میمز بھی خاصی دلچسپ ہیں۔

اس سے قبل وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے کہا ہے کہ کورونا سے متاثرہ اضلاع میں آٹھویں جماعت تک کلاسز 28 اپریل تک بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

این سی او سی اجلاس کے بعد پریس کانفرنس کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ عید تک تعلیمی ادارے بند رکھنے کا فیصلہ 28 اپریل کو ہو گا،امتحانات مئی کے تیسرے ہفتے میں ہوں گے۔ میڈیا بریفنگ میں شفقت محمود نے کہا کہ اجلاس میں متفقہ طور پر فیصلہ کیا گیا ہے کہ نویں سے بارہویں جماعت تک امتحانات ضرور ہوں گے، کیمبرج کے تمام امتحانات بھی وقت پر ہوں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ بچوں کامستقبل اور ان کی صحت ہمارےلیےاہم ہے، یونیورسٹیز سے انٹری ٹیسٹ کی تاریخیں بڑھانے کا کہا ہے، دنیا کے 80 فیصد ممالک میں امتحانات ہورہے ہیں، بورڈ امتحانات شیڈول کے مطابق سخت ایس او پیز کے ساتھ ہوں گے۔

انہوں نے کہا سندھ نے بھی آٹھویں جماعت تک کلاسز کے لیے تعلیمی ادارے بند رکھنے کا اعلان کیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں