پبلک نیوز ہیڈلائنز، دوپہر 12 بجے،30 اپریل، 2021

ریفرنس فائل کرنا بشیر میمن کا کام ہی نہیں تھا، انہیں کیوں کہتا؟ وزیراعظم کی سینئر صحافیوں سے گفتگو، کہا بشیر میمن جو بھی کہہ رہے ہیں، جھوٹ ہے، بشیر میمن کو خواجہ آصف کے اقامے کی تحقیقات کا کہا تھا، وزیراعظم نے کہا احتساب سے پیچھے نہیں ہٹ سکتے، چاہے پارٹی کے سینیئر رہنما جہانگیرترین ہی کیوں نہ ہوں۔ بیرسٹر علی ظفر دیکھیں گے کہ کہیں جہانگیر ترین کو ناجائز نشانہ تو نہیں بنایا جا رہا۔۔۔ کہا ڈاکٹر رضوان کو عہدے سے نہیں ہٹایا، ابوبکر خدابخش ان کے ساتھ ہوں گے۔۔

این اے 249 ضمنی الیکشن میں پیپلز پارٹی نے میدان مار لیا، پی پی امیدوار قادر خان مندوخیل 16 ہزار 156 ووٹ لے کر کامیاب قرار، ن لیگ کے مفتاح اسماعیل 15 ہزار 473 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے، کالعدم تحریک لبیک کے نذیر احمد کا 11 ہزار 125 ووٹ لے کر تیسرا نمبر، پاک سرزمین پارٹی کے مصطفیٰ کمال نے 9 ہزار 227 ووٹ لیے، تحریک انصاف کے 8 ہزار 922 اور ایم کیو ایم 7 ہزار 511 ووٹ لے سکی۔

مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کا الیکشن کمیشن سے نتائج روکنے کا مطالبہ، کہا چند سو ووٹوں سے ن لیگ سے جیت چرائی گئی، الیکشن کمیشن نے نتیجہ نہ روکا تو بھی کامیابی عارضی ہوگی، فتح جلد ن لیگ کے حصے میں آئے گی، مریم نواز نے این اے 249 کا انتخاب متنازع ترین انتخابات میں سے ایک قرار دےدیا۔

این اے249 کے نتائج سامنے آنے پر مسلم لیگ ن اور پیپلزپارٹی آمنے سامنے آگئے، ناصر حسین شاہ کہتے ہیں ن لیگ سارا الزام الیکشن کمیشن پر ڈال دیتی ہے، یہ جہاں سے ہارتے ہیں وہاں سے ان کا ایجنٹ نتیجہ لیے بغیر غائب ہوتا ہے، مسلم لیگ ن نے ڈسکہ میں بھی یہی کیا تھا، یہ شاید بھول گئے ہیں کہ اس دفعہ ان کا مقابلہ حقیقی جمہوری پارٹی سے تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں