’وسائل کی غیر منصفانہ تقسیم سے جنوبی پنجاب پیچھے رہ گیا‘

لاہور (پبلک نیوز) وزیراعظم عمران خان سے جنوبی پنجاب سے تعلق رکھنے والے ممبران قومی و صوبائی اسمبلی کی ملاقات، وفاقی وزیر برائے صنعت مخدوم خسرو بختیار, وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدار اور صوبائی وزیر خزانہ مخدوم ہاشم جواں بخت بھی ملاقات میں شریک تھے۔

ممبران قومی اسمبلی میں فاروق اعظم، رانا قاسم نون، سردار نصراللہ خان دریشک، طاہر اقبال، عبدالغفار وٹو، میاں شفیق آرائیں، سردار عامر طلال گوپانگ، ممبر صوبائی اسمبلی پنجاب سمیع اللہ چوہدری، حسنین دریشک اور دوست محمد مزاری شامل تھے۔

ملاقات میں جنوبی پنجاب میں عوامی فلاحی، ترقیاتی اور جنوبی پنجاب سیکرٹیریٹ کے قیام کے حوالے سے امور پر گفتگو کی گئی۔ ممبران نے اپنے متعلقہ حلقوں میں عوام الناس کو درپیش مسائل کے حل بالخصوص سڑکوں، پینے کے صاف پانی کی فراہمی اور سیوریج سمیت دیگر بڑے ترقياتی منصوبوں کے حوالے سے تجاویز پیش کیں۔

ممبران نے وزیر اعظم کی جنوبی پنجاب میں خصوصی دلچسپی اور فلاحی و ترقیاتی منصوبوں کے حوالے سے ترجیحات مرتب کرنے پر وزیر اعظم کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ ماضی میں جنوبی پنجاب کے عوام کو نظر انداز کیا گیا۔ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت حقیقی معنوں میں جنوبی پنجاب کی ترقی و خوشحالی کے وژن پر عملدر آمد ممکن بنا رہی ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے ممبران کو اپنے متعلقہ حلقوں میں عوام الناس کو درپیش مسائل کے حل کو ترجیحی بنیادوں پر ممکن بنانے کی ہدایت کرتے ہوئے بھرپور تعاون کی یقین دہانی کرائی اور کہا کہ مجوزہ ترقیاتی منصوبوں کے حوالے سے سفارشات کی تر جیحی بنیادوں پر حتمی منظوری دینے کے لیے وہ جلد ہی اجلاس کی صدارت کریں گے۔

وزیر اعظم نے کہا کہ ماضی میں جنوبی پنجاب وسائل کی غیر منصفانہ تقسیم کی بدولت ترقی کے سفر میں پیچھے رہ گیا۔ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت جنوبی پنجاب کی ترقی کے لیے ہر ممکن اقدامات اٹھائے گی۔

عمران خان نے مزید کہا کہ پاکستان میں خوشحالی اور معاشی ترقی قانون کے يكساں اطلاق اور عوام کوانصاف کی يكساں فراہمی سے ہی یقینی بنائی جا سکتی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں