او آئی سی کا اہم اجلاس، تمام مسلم ممالک کا بڑا فیصلہ

اسلام آباد (پبلک نیوز) اسلامی تعاون تنظیم او آئی سی کے وزرائے خارجہ کے اجلاس میں فلسطین کے حق میں اور اسرائیلی مظالم کے خلاف قرارداد منظور کرلی۔

قراد داد میں اسرائیل کو خبرادر کیا گیا وہ حالات کو مزید بگاڑنے سے باز رہے اور تمام تر خلاف ورزیاں فوری بند کرے، فلسطینی مقدس مقامات اور مسجد اقصیٰ کی بےحرمتی فوری بند کرے قرار داد کے متن کے مطابق القدس کی ہاشمی خاندان کے ذریعے نگرانی کی حمایت کرتے ہیں۔

اسرائیل کے توسیعی منصوبے کو مسترد کرتے ہیں اور اسرائیل کی نوآبادیاتی پالیسی پر تحفظات کا اظہار کرتے ہیں اسرائیل کو حالات کا ذمہ ٹھراتے ہوئے عالمی برادری سے مطالبہ کیا کہ عالمی برادی اپنی ذمہ داریاں پوری کرے جبکہ سلامتی کونسل فوری طور پر اسرائیلی حملے بند کرائے۔

او آئی سی کے اجلاس سے ورچوئل خطاب کرتے ہوئے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ او آئی سی اسرائیلی جارحیت رکوانے کیلئے ہر ممکن قدم اٹھائے۔ اسرائیلی فوج نہتے فلسطینیوں کے خلاف جارحیت کررہی ہے اور غزہ پر اسرائیلی بمباری سے بے گناہ فلسطینی شہید ہورہے ہیں، عالمی برادری فلسطینیوں کے خلاف طاقت کا غیرقانونی استعمال رکوائے۔

 سعودی عرب کے وزیر خارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان نے کہا ہے کہ یت المقدس فلسطینیوں کی سرزمین ہے، نقصان پہنچانےکی اجازت نہیں دینگے۔ اسرائیل فلسطینیوں کے حقوق کی کھلم کھلا خلاف ورزیاں کررہا ہے، عالمی برادری کو فوری طور پر مداخلت کرتے ہوئے اسرائیلی اقدامات کو روکنا ہوگا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں