’میٹرک اور انٹر کے پریکٹکل امتحانات نہیں ہوں گے‘

اسلام آباد (پبلک نیوز) چیئرمین فیڈرل بورڈ قیصر عالم نے کہا ہے کہ امتحانات دس جولائی سے 31 جولائی تک ہوں گے۔ بارہویں اور دسویں کے امتحانات پہلے ہوں گے۔ ان کے نتائج پہلے جاری کریں گے۔ ان نتائج کی بنیاد پر بچے جامعات داخلہ لے سکیں گے۔ نویں اور گیارہویں کے امتحانات اس کے بعد ہوں گے۔

پریس کانفرنس کے دوران ان کا کہنا تھا کہ 767 میٹرک کے اور انٹرمیڈیٹ 385 سینٹرز بنائے جائیں گے۔ میٹرک اور انٹرمیڈیٹ کے امیدوار 3 لاکھ 85 ہزار سے زائد ہیں۔ کورونا کے باعث سلیبس بھی کم کیا ہے۔ طلبا کا تمام دارومدار اختیاری مضامین پر ہوتا ہے۔ ریگولر طلبا کا امتحان اختیاری مضامین میں ہوگا۔

انھوں نے کہا کہ جو بچے ری اپیئر ہونا چاہ رہے ہیں ان کا امتحان بھی اسی طرح ہوگا۔ ان بچوں کی ڈیٹ شیٹ نویں اور گیارہویں کے ساتھ جاری ہوگی۔ امپروومنٹ والے بچوں کا امتحان اگست میں ہوگا۔ پہلی بار امتحانات میں ڈیجیٹل اٹینڈنس لگے گی۔ ایک گھنٹے کے دوران فیڈرل بورڈ کے ڈیش بورڈ پر بچوں کی حاضری ، غیر حاضری کا پتہ چل جائے گا۔ والدین کو بھی بچوں کی حاضری سے متعلق الرٹ بھیج دیا جائے گا۔

قیصر عالم کا کہنا تھا کہ ڈیجیٹلی امتحانات کی انسپکشن بھی ہو گی۔ ابھی امتحانات کے پریکٹیکل نہیں لے رہے۔ آئندہ امتحانات میں پریکٹیکل لیں گے۔ پریکٹیکل کے نتائج ایک گھنٹے میں موصول ہوجائیں گے۔ امتحانات ای مارکنگ کے زریعے چیک ہوں گے۔ اس طریقہ کار سے معروضیت آجائے گی۔ جو سوال کیا ہے اسی کے مطابق جواب چیک ہوگا۔

چیئرمین فیڈرل بورڈ نے کہا کہ کوشش ہے 30 روز کے اندر امتحانات کے نتائج کا اعلان ہوجائے۔ فیڈرل بورڈ میں ون ونڈو سسٹم کے تحت 5 منٹس میں سروس فراہم کررہے ہیں۔ بورڈ کی تمام سروسز آن لائن فراہم کردی گئی ہیں۔ اب گھر بیٹھے آن لائن پیمنٹ کرکے سروس حاصل کرسکتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں