اسرائیل نواز اتھارٹی اب خواتین پر بھی حملہ آور ہونے لگی

بیت المقدس ( ویب ڈیسک ) اسرائیل نواز اتھارٹی نے اخلاقیات کی تمام حدوں کو پار کرتے ہوئے نہتے بے گناہ فلسطینی نزار بنات کو شہید کرنے کیخلاف احتجاج کرنے والے فلسطینی مظاہرین پر دھاوا بول دیا ٗ اس دوران مظاہرے میں شریک خواتین کو ڈنڈے مارے گئے ٗ ان کو کپڑے سے پکڑ کر گھسیٹا گیا ۔

تفصیلات کے مطابق اسرائیل نواز اتھارٹی نے مظاہرہ کرنے والے ایک فلسطینی نزار بنات کو گرفتار کیا جس کی چند گھنٹوں بعد ہی موت واقع ہو گئی جس کے بعد فلسطینی مظاہرین اس وقت مغربی کنارے اور دیگر مقامات پر احتجاج کرنے میں مصروف ہیں۔ بنات کے ورثا کا الزام ہے کہ ان کےبیٹے کو قتل کیا گیا ہے ۔

اسی سلسلہ میں گزشتہ روز بھی فلسطینی مظاہرین مغربی کنارے میں احتجاج میں مصروف تھے جب اسرائیلی نواز اتھارٹی نے ان پر دھاوا بول دیا ٗ پرامن مظاہرین پر آنسو گیس اور ربڑ کو گولیاں داغی گئیں ٗ مظاہرین نے پرامن انداز میں اسرائیل کیخلاف نعرے بازی کی ٗسوشل میڈیا پر فلسطینیوں کو اس جنازے میں شرکت کی دعوت دی گئی تھی جس پر ہزاروں مظاہرین اکٹھے ہوگئے۔

اس سارے واقعہ میں افسوسناک واقعات تب رونما ہوئے جب اسرائیل نواز اتھارٹی کی جا نب سے احتجاج کرنے والی خواتین کو بھی نہ بخشا گیا اور انہیں ڈنڈے مارے گئے ٗ کپڑے سے پکڑ کر گھسیٹا گیا اور ایک خاتون کو تو زمین پر لٹا کر مارا گیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں