”شاہد خاقان نے شہباز شریف کے خلاف بیان دیا اور مکر گئے“

اسلام آباد ( پبلک نیوز) پارلیمانی سیکرٹری برائے قانون ملیکہ بخاری نے کہا ہے کہ پی ڈی ایم کے بعد مسلم لیگ ن میں بھی لڑائی ہو گئی ،شاہد خاقان نے شہباز شریف کے خلاف بیان دیا اور مکر گئے ،2018 اور گلگت بلتستان انتخابات میں عوام کے ہاتھوں مسترد ہونے والے کشمیر میں بھی شکست کھائیں گے، کشمیر میں بھی عمران خان کا نام ہی گونجے گا ۔

ایک بیان میں پارلیمانی سیکرٹری برائے قانون ملیکہ بخاری نے کہا کہ مودی کو اپنے گھر بلانے، گلابی رنگ کی پگڑیاں پہنانے والے کس منہ سے کشمیریوں کا سامنا کریں گے،نوازشریف نے ایک بار کلبھوشن کا نام نہیں لیا، وہ لوگ آج ہمیں مودی کے خلاف طعنے دے رہے ہیں، جو چار سال تک اپنا وزیر خارجہ تعینات نہ کر سکے وہ خارجہ پالیسی کی بات کس منہ سے کرتے ہیں؟ ۔

انہوں نے کہا کہ نواز شریف کی خارجہ پالیسی یہ تھی کہ وزارت خارجہ کو کچھ پتہ نہ تھا کہ کون سی پالیسی چلا رہے ہیں،نواز شریف کی خارجہ پالیسی یہ تھی کہ انکے بھارتی کاروباری دوست خاموشی سے آتے اور ڈیل کر کے چلے جاتے ،مسلم لیگ ن میں مریم نواز اور شہباز شریف دونوں وزیراعظم بننا چاہتے ہیں ، عوام نے پوری جماعت کو مسترد کر دیا ہے ۔

ملیکہ بخاری نے کہا کہ اداروں کو متنازعہ بنانے والے اب مفاہمت کی بات کر رہے ہیں ،مریم نواز کا مزاہمت کا بیانیہ اب مفاہمت میں بدل چکا ہے ، عوام بھی ان کو پہچان گئے ، سارا مقصد اقتدار کی جنگ ہے ،مسلم لیگ ن میں اب شہباز شریف اور مریم نواز گروپ ہے ، چچا بھتیجی دونوں اپنے مقاصد کے حصول کے لئے لڑ رہے ہیں ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں