فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میں بجلی سستی کر دی گئی

کراچی ( پبلک نیوز) حکومت کی طرف سے بجلی صارفین کیلئے اچھی خبر، جون کی فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میں بجلی اکیس پیسے فی یونٹ سستی ،صارفین کو آئندہ ماہ کے بلوں مین ریلیف ملے گا ۔

تفصیلات کے مطابق نیپرا بجلی کمی کے حوالے سے اپنا تفصیلی فیصلہ بعد میں جاری کرے گا ،فیصلے کا اطلاق لائف لائن زرعی صارفین اور کے الیکڑک صارفین پر نہیں ہوگا ۔

ممبر سندھ نیپرا نے کہا کہ کیا سی پی پی اے کا این ٹی ڈی سی کے ساتھ بجل ترسیل کا کوئی معاہدہ ہے ، این ٹٰی ڈی سی کا بجلی کمپنیوں کے ساتھ بجلی ترسیل کا معاہدہ ہے ، اگراین پی سی سی کسی چیز کی ذمہ داری نہیں لیتا تو ٹیرف پٹیشن کیوں لے کرآئے ہیں ، سب کو پتا چلنا چاہیے کہ مسئلہ کہاں پر آرہاہے۔

ممبر سندھ نے کہا کہ ڈھائی سال سے چل رہاکہ ادارے ایک دوسرے پر ذمہ داری ڈال رہے ہیں ،اب بات سیٹل ہونی چاہیے کہ کس کی کیاذمہ داری ہے ۔معاملے پرسی پی پی اے این ٹی ڈی سی اور ڈسکوز نمائندگان کا اجلاس بلانے کا فیصلہ

نیپرا حکام کا کہنا ہے کہ میرٹ آرڈر سے ہٹ کر پلانٹس چلانے سے ڈیڑھ ارب روپے کا اضافی بوجھ پڑے گا ، ایل این جی اورکوئلے کی قلت سے اکاسی کروڑ اناسی لاکھ روپے کا بوجھ پڑے گا ، سی پی پی اے نے گزشتہ تین سال کی تیرہ ارب روپے کی ایڈجسٹمنٹس مانگی ہیں، ان ایڈجسٹمنٹس سے گیارہ ارب روپے کا صارفین کو فائدہ پہنچے گا۔

چئیر مین نیپرا نے کہا کہ حالیہ بجلی بحران پر حکومت انکوائری کررہی ہے ، فیول کی عدم دستیابی کا معاملہ اوگرا سے متعلق ہے ہمارے ڈومین سے باہر ہے ، نیپرا ان ایڈجسٹمنٹ کے حوالے سے بعد میں فیصلہ کرے گا ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں