گیس 14فیصد تک مہنگی کر دی گئی

اسلام آباد (پبلک نیوز) مہنگائی کے ستائے عوام کے لیے ایک اور بری خبر، اوگرا نے مالی سال 2021۔22 کے لیے گیس 14فیصد تک مہنگی کر دی۔

تفصیلات کے مطابق سوئی نادرن کے لیے گیس کی بنیادی قیمت میں 14 فیصد اضافہ کر دیا گیا۔ سوئی سدرن کے لیے گیس 7فیصد تک مہنگی کردی گئی۔ سوئی نادرن کے لیے گیس کی قیمت میں 86.93 روپے ایم ایم بی ٹی یو اضافہ کیاگیاہے۔

سوئی سدرن کے لیے گیس کی قیمت 54.47 روپے فی ایم ایم بی ٹٰی یو بڑھائی گئی۔ سوئی نادرن کے لئے گیس کی بنیادی قیمت 685 روپے 77 پیسے فی ایم ایم بی ٹی یو مقرر کر دی گئی۔ سوئی سدرن کے لیے گیس کی بنیادی قیمت 779 روپے 88 پیسے مقرر کر دی گئی۔

اوگرا نے مالی سال 2021۔22 کے لیے اپنا فیصلہ جاری کر دیا۔ اوگرا کا کہنا ہے کہ سوئی نادرن کے 254 ارب روپے کے بقایاجات کی وصولی کا اختیار وفاقی حکومت کو دیا گیا ہے۔ اوگرا نے گیس قیمتوں میں اضافے کا فیصلہ وفاقی حکومت کو بھجوادیاہے۔ قیمتوں میں اضافے کی حتمی منظوری وفاقی حکومت دے گی۔

کہا گیا ہے کہ وفاقی حکومت کی منظوری کے بعد گیس صارفین کے لئے قیمتوں کا تعین ہوگا۔ اوگرا نے گیس کمپنیوں کو نامکمل منصوبے فوری مکمل کرنے کی ہدایت کر دی۔ سوئی سدرن کو گیس چوری روکنے کے حوالے سے اقدامات کرنے کی ہدایت کر دی گئی۔

گیس کمپنیوں نے نقصانات پوراکرنے کیلئے ٹیرف میں اضافے کی درخواست کی تھی جس پر اوگرا نے سوئی ناردرن گیس کمپنی کیلئے 86روپے 93پیسے فی یونٹ اضافے کی سفارش کی، سوئی سدرن گیس کمپنی کے ٹیرف میں 7فیصد اضافے کی سفارش کی۔ سوئی سدرن گیس کمپنی کیلئے 54روپے 47پیسے فی یونٹ اضافے کی سفارش کی گئی ہے۔

سوئی ناردرن گیس کمپنی نے ٹیرف میں 154فیصد اضافے کی درخواست کی تھی ۔ سوئی ناردرن گیس کمپنی نے 857روپے 40پیسے فی یونٹ اضافہ مانگا تھا۔ سوئی سدرن گیس کمپنی نے ٹیرف میں 8فیصد اضافے کی درخواست کی تھی۔ سوئی سدرن گیس کمپنی نے 63روپے 82پیسے فی یونٹ اضافہ مانگا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں