خاتون ٹک ٹاکر عائشہ سے دست درازی پر سپریم کورٹ کا نوٹس

اسلام آباد (پبلک نیوز) مینار پاکستان کے احاطہ میں خاتون ٹک ٹاکر عائشہ کے ساتھ دست درازی کا واقعہ پر سپریم کورٹ کے انسانی حقوق سیل نے نوٹس لے لیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق آئی جی پنجاب کی طرف سے سپریم کورٹ کے انسانی حقوق سیل میں رپورٹ جمع کرا دی گئی۔ رپورٹ کے مطابق واقعہ کی جامع تحقیقات کے لیے چار خصوصی ٹیمیں تشکیل دی گئیں۔ تفتیشی ٹیم نے جائے وقوعہ کا دورہ کیا۔

متن میں کہا گیا ہے کہ متاثرہ خاتون کا میڈیکل کرایا گیا۔ تیس ویڈیوز، 60 تصاویر اکٹھی کرکے نادرا کو شناخت کیلئے بجھوائی گئیں۔ نادرا نے نو افراد کی شناخت کی۔ نو افراد کو گرفتار کیا گیا۔ ان کی نشاندہی پر مزید افراد کو گرفتار کیا گیا۔

آگاہ کیا گیا کہ اب تک بانویں افراد کو گرفتار کیا جا چکا ہے۔ انٹیلی جنس ایجنسیوں کی مدد سے جیو فنسنگ ڈیٹا اکٹھا کیا گیا۔ واقعہ کی شام ساڑھے چھ سے لیکر سات چالیس تک اٹھائیس ہزار سے زائد افراد کا کال ڈیٹا اکٹھا کیا گیا۔ سات سو سے زائد افراد کو مشکوک قرار دیا گیا۔

سپریم کورٹ کو یقین دہانی بلا تفریق کارروائی کے لیے تمام وسائل بروئے کار لائے جائیں گے۔ واقعہ کی ہر پہلو سے مکمل تحقیقات کریں گے۔ ملوث ملزمان کو سامنے لاکر مثالی سزائیں دلوائی جائیں گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں