پنڈورا پیپرز: کون سی اہم عالمی شخصیات شامل ہیں؟

لاہور(پبلک نیوز)‌ صحافیوں کی عالمی تنظیم نے ایک اور بڑا مالیاتی اسکینڈل بے نقاب کردیا۔ ’’پنڈورا پیپرز‘‘ پر 117 ممالک سے تعلق رکھنے والے 600 صحافیوں نے دو سال تک تحقیقات کیں جن میں 2 پاکستانی صحافی بھی شامل ہیں.

200 سے زائد ممالک کی 29 ہزار آف شورکمپنیوں کا پردہ فاش ہو گیا، روس کے صدر ولادی میرپیوٹن، سابق برطانوی وزیراعظم ٹونی بلیئر کا نام بھی پنڈورا پیپرز میں شامل ہے. ، چیک ری پبلک کے وزیراعظم کی آف شور کمپنی بےنقاب، یوکرین،کینیا اور ایکواڈور کے صدور کے نام بھی پنڈورا پیپرز میں شامل، سابق بھارتی کرکٹرسچن ٹنڈولکر اور گلوکارہ شکیرا کے نام بھی آف شورکمپنی رجسٹرڈ، بھارتی صنعت کارانیل امبانی کی بھی آف شور کمپنی نکل آئی۔فوربز میگزین کے مطابق اِن 100 ارب پتی افراد کے پاس کُل 600 ارب ڈالرز کے اثاثے موجود ہیں۔

دوسری جانب 700 سے زائد پاکستانیوں کی آف شور کمپنیاں سامنے آگئیں ہیں، مونس الٰہی، فیصل واوڈا، علیم خان، شوکت ترین ، شرجیل میمن کی آف شور کمپنیاں سامنے آئی ہیں اس کے علاوہ ،سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار کے بیٹے علی ٖڈار،وفاقی وزیرخسرو بختیار کے بھائی عمر بختیار کا نام بھی اس فہرس میں شامل ہے، ابراج گروپ کے سی ای او عارف نقوی، ایگزٹ کمپنی کے مالک شعیب شیخ، سابق سفیرعلی جہانگیرصدیقی کی بھی آف شور کمپنیاں نکل آئی ہیں۔

وزیراعظم عمران خان نے پنڈورا پیپرز کا خیرمقدم کیا،انہوں نے کہا پنڈورا پیپرز نے اشرافیہ کی ناجائز دولت کو بےنقاب کیا، فہرست میں شامل تمام پاکستانیوں کی تحقیقات کریں گے، جو قصور وار پایا گیا اس کیخلاف ایکشن لیں گے، وزیراعظم نے کہا ناجائز دولت ٹیکس چوری اور بدعنوانی کے ذریعے جمع کی جاتی ہے۔ اقوام متحدہ کے پلیٹ فارم سے 7ٹریلین ڈالر کی غیرقانونی اثاثوں کی نشاندہی کی تھی.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں