ڈینگی کے وار مزید تیز، ہلاکتوں میں اضافہ

لاہور (پبلک نیوز) ڈینگی کے وار کم ہونے کی بجائے مزید تیز ہوگئے۔ ہلاکتوں میں بھی اضافہ ہوگیا۔ محکمہ صحت نے صوبہ بھر میں ڈینگی لاروا کو تلف کرنے اور افزائش روکنے کے لیے کاروائیاں تیزکردی ہیں۔

عمران سکندر بلوچ نے کہا ہے کہ گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران صوبہ بھر سے ڈینگی کے 546 مریض رپورٹ ہوئے ہیں۔ گذشتہ روز لاہور سے ڈینگی کے 361 مریض رپورٹ ہوئے ہیں۔ گذشتہ روز راولپنڈی سے ڈینگی کے 47، شیخوپورہ میں 18 جبکہ گوجرانوالہ میں 16 مریض رپورٹ ہوئے ہیں۔ گذشتہ روز فیصل آباد سے ڈینگی کے 15، قصور سے 11 جبکہ خوشاب سے 8 مریض رپورٹ ہوئے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ گذشتہ روز مظفرگڑھ میں 7 جبکہ سرگودھا اور سیالکوٹ سے ڈینگی کے 6 چھے مریض رپورٹ ہوئے ہیں۔ گذشتہ روزبھکر سے ڈینگی کے 5 جبکہ اٹک سے 4 کیسز سامنے آئے ہیں۔ رواں سال پنجاب بھر سے اب تک ڈینگی کے کیسز کی تعداد 9,491 ہو چکی ہے۔ رواں سال لاہور سے اب تک ڈینگی کے 6,294 کیسز سامنے آئے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ رواں سال پنجاب بھر میں ڈینگی بخار کے باعث 29 افراد جان کی بازی ہار چکے ہیں۔ گذشتہ روز پنجاب میں ڈینگی بخار کے باعث 4 اموات رپورٹ ہوئی ہیں۔ گذشتہ روز ڈینگی بخار سے ہلاک ہونے والے 3 افراد کا تعلق لاہور جبکہ 1 کا تعلق فیصل آباد سے ہے۔ صوبہ بھر کے ہسپتالوں میں ڈینگی کے 2,286 مریض داخل ہیں۔ لاہور کے ہسپتالوں میں ڈینگی کے 1,294 مریض داخل ہیں۔ لاہور کے علاوہ صوبہ بھر کے ہسپتالوں میں ڈینگی کے 992 مریض داخل ہیں۔ پنجاب بھر کے سرکاری ہسپتالوں میں اس وقت ڈینگی کے لئے 4,846 بستر مختص کئے گئے ہیں۔

ڈینگی کے بڑھتے ہوئے کیسز کو مدنظر رکھتے ہوئے لاہورکے ٹیچنگ ہسپتالوں میں بھی ڈینگی کے مریضوں کیلئے بستروں کی تعدادمیں اضافہ کیا گیا ہے۔ پنجاب میں ڈینگی کےلئے مختص کئے گئے 2,286 بستروں پر مریض زیر علاج ہیں۔ لاہور میں ڈینگی کےلئے مختص کئے گئے 1,294 بستروں پر مریض زیر علاج ہیں۔ گذشتہ روز پنجاب بھر میں 2,081 ان ڈور اور آوٹ ڈور مقامات سے لاروا تلف کیا گیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں