اگر آپ کو یہ بیماری ہے تو غلطی سے بھی کھجور نہ کھائیں

لاہور: (ویب ڈیسک) کھجور کھانا فائدہ مند سمجھا جاتا ہے لیکن اس کا زیادہ استعمال آپ کو نقصان بھی پہنچا سکتا ہے۔ ماہرین کے مطابق ایک دن میں 5 سے زیادہ کھجوریں نہیں کھانی چاہیں۔

کھجور غذائی ریشہ، کاربوہائیڈریٹس، پروٹین، وٹامن بی 6 اور آئرن سے بھرپور ہوتی ہے۔ اسے دودھ کے ساتھ کھانے سے ہاضمہ بہتر ہوتا ہے۔ اس کے علاوہ اس میں موجود فائبر کی وافر مقدار دماغی صحت کے لیے بھی فائدہ مند ہے لیکن ایک دن میں 5 سے زیادہ کھجوریں کھانا آپ کو نقصان پہنچاتا ہے۔

پیٹ کے مسائل

مارکیٹ میں ملنے والی کھجور میں سلفائٹ کو بطور پرزرویٹیو استعمال کیا جاتا ہے۔ سلفائٹ ایک کیمیائی مرکب ہے، یہ نقصان دہ بیکٹیریا کو دور رکھتا ہے، لیکن اگر آپ کو سلفائٹس سے الرجی ہے تو کھجور کھانے سے پیٹ میں درد، گیس، پیٹ پھولنا اور اسہال ہو سکتا ہے۔ کھجور میں بہت زیادہ فائبر ہوتا ہے اور بہت سے حالات میں اس کی زیادہ مقدار آپ کو نقصان پہنچا سکتی ہے۔

ہائپر کلیمیا

کھجور میں پوٹاشیم زیادہ ہوتا ہے۔ اس کا زیادہ استعمال جسم میں پوٹاشیم کی سطح کو بڑھاتا ہے۔ اس حالت کو ہائپر کلیمیا کہا جاتا ہے۔ اس سے متلی، بے ہوشی، پٹھوں کی کمزوری، جھنجھناہٹ اور آکشیپ ہو سکتی ہے۔

دمہ میں نہ کھائیں

کھجور سے الرجی ہوتی ہے۔ اگر آپ کو دمہ کا مسئلہ ہے تو کھجور کھانے سے اس میں اضافہ ہوسکتا ہے۔ دمہ کے مریض کھجور کھاتے وقت اس بات کا خاص خیال رکھیں۔ سردیوں میں تھوڑی سی کالی مرچ گڑ کے ساتھ کھائیں، یہ بیماری ایک چٹکی میں دور ہو جائے گی۔

ذیابیطس اور بلڈ پریشر

کھجور قدرتی طور پر میٹھی ہوتی ہے اور اگر اس کا زیادہ استعمال کیا جائے تو یہ ذیابیطس اور بلڈ پریشر کا مسئلہ بڑھا سکتی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں