کمر پر ہاتھ رکھ کر سیلفی لینے کا کسی کو حق نہیں، انوشے اشرف

لاہور: (ویب ڈیسک) معروف اداکارہ انوشے اشرف نے اپنی ایک ٹویٹ میں شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ کام کرنے والے ساتھی اور دوست میں فرق ہوتا ہے۔ کمر پر ہاتھ رکھ کر سیلفی لینے کا کسی کو حق نہیں ہے۔

گذشتہ روز جاری اپنی ایک ٹویٹ میں انوشے اشرف نے کسی کا نام تو نہیں لیا لیکن بظاہر ایسا ہی لگتا ہے کہ ان کے کسی کولیگ نے ان کیساتھ کسی محفل یا تقریب میں برا رویہ اختیار کیا جس کا اداکارہ نے برا منایا اور اپنے غصے کا اظہار کیا۔ تاہم انہوں نے اس شخص کو تنبیہ کرتے ہوئے اس کی عزت کو بھی ملحوظ خاطر رکھا لیکن سخت وارننگ بھی دیدی کہ آئندہ ایسی حرکت دوبارہ نہیں ہونی چاہیے۔

انوشے اشرف نے اپنی ٹویٹ میں لکھا کہ ’کسی کیساتھ کام کرنے کا ہرگز مطلب یہ نہیں کہ وہ اس شخص کی ’بے بی‘ بن گئی ہیں۔ ایسے لوگوں کو دوست اور ساتھی کا فرق سمجھنا ہوگا، انہیں اس ادراک ہونا چاہیے کہ’پرائیویسی‘ بھی کوئی چیز ہوتی ہے۔ کسی شخص کو یہ حق نہیں پہنچتا کہ وہ انہیں دوست یا ’بے بی‘ سمجھ کر ان کی ’کمر‘ پر ہاتھ رکھ کر ان کیساتھ سیلفی بنائے۔

اداکارہ کی اس ٹویٹ کو متعدد شخصیات د نے ری ٹویٹ کرکے ان کیساتھ ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے مطالبہ کیا کہ وہ اس شخص کو منظر عام پر لے کر آئیں۔ ڈیجیٹل رائٹس فاؤنڈیشن کی سربراہ نگہت داد نے اس پر ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ لوگوں کو مذکورہ مسئلے کو سمجھنے کی ضرورت ہے۔ جب تک دونوں رضامند نہ ہوں ایسا تو کوئی دوست بھی نہیں کرتا۔

دیگر افراد نے بھی ان کی ٹوئٹ کو ری ٹوئٹ کرتے ہوئے لکھا کہ ’دوست کو بھی ایسا کرنے کا حق نہیں پہنچتا اور ایسا کرنے کے لیے ’رضامندی‘ لینے کی ضرورت ہوتی ہے۔

خیال رہے کہ انوشے اشرف سوشل میڈیا پر متحرک رہتی ہیں، وہ اپنے ساتھ ہونے والے مسائل سمیت خواتین کو درپیش مشکلات اور سماجی مسئلوں پر بھی کھل کر بات کرتی رہتی ہیں۔ اداکارہ جانوروں کے حقوق سے متعلق بھی کھل کر بیانات دیتی رہتی ہیں اور بعض مرتبہ انہیں آواز بلند کرنے کی وجہ سے تنقید کا سامنا بھی رہتا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں