ماں اپنے بیٹے کو بچانے کیلئے تیندوے سے لڑ پڑی

نئی دہلی: (پبلک نیوز) ماں اپنے بچے کی حفاظت کے لیے دنیا کے کسی بھی خطرے سے لڑ سکتی ہے، ایسا ہی واقعہ بھارت میں پیش آیا جہاں ایک تیندوا بچے پر حملہ آور ہوا تو کی ماں اسے موت کے منہ سے گھسیٹ کر واپس لے آئی۔

مدھیہ پردیش کے وزیراعلیٰ شیوراج سنگھ چوہان نے ٹویٹ کرکے اس خاتون کی ہمت کی تعریف کی ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق یہ واقعہ مدھیہ پردیش کے شہر بھوپال سے 500 کلومیٹر دور سدھی ضلع میں سنجے ٹائیگر ریزرو کے بفر زون میں آنے والے گاؤں بادی جھریا میں پیش آیا۔ یہاں بیگا قبیلے کی ایک عورت کرن اپنے تین چھوٹے بچوں کے ساتھ سردی کی وجہ سے آگ کے پاس بیٹھی ہوئی تھی۔

تبھی اچانک وہاں ایک تیندوا آیا اور اس کے 8 سالہ بیٹے راہول کو جبڑے سے پکڑ کر بھاگ گیا۔ اس ناگہانی واقعہ سے پہلے خاتون کی سمجھ میں کچھ نہیں آیا لیکن اس کے بعد اس نے پہلے اپنے دونوں بچوں کو جھونپڑی میں بند کیا اور فوراً جنگل کی طرف بھاگی۔ خاتون نے تقریباً ایک کلومیٹر تک تیندوے کا پیچھا کیا۔

اس کے بعد خاتون نے دیکھا کہ تیندوا ایک جھاڑی میں چھپا ہوا ہے اور اس کا بچہ اس کے پنجوں میں پھنس گیا ہے لیکن کرن نے بھی ہمت نہیں ہاری اور وہ لاٹھی سے تیندوے کو ڈراتی رہی۔ اس دوران اس نے شور بھی مچایا۔ سنجے ٹائیگر ریزرو کے ایک اہلکار نے بتایا کہ شاید تیندوا خاتون کی ہمت سے ڈر گیا تھا اس لیے بچے کو چھوڑ دیا ۔ اس کے بعد خاتون فوراً اپنے بچے کو گود میں لیے گھر کی طرف بھاگنے لگی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں