طلال چوہدری کے بیان پر احسن اقبال کی وضاحت

پبلک نیوز: مسلم لیگ ن کے رہنماء احسن اقبال نے طلال چوہدری کے بیان پر وضاحت جاری کرتے ہوئے کہا کہ طلال چودھری نے جو زبان استعمال کی وہ ن لیگ کی زبان نہیں ہے ، طلال چودھری کو بھی اپنے الفاظ پر معذرت کرنی چاہیے.

واضح رہے کہ گزشتہ روز سوشل میڈیا پر لیگی رہنماء طلال چودھری کی وائرل ویڈیو پر جیالوں‌کا شدید ردعمل سامنے آیا تھا . طلال چودھری نے ایک بیان میں پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کے بارے میں نازیبا زبان کا استعمال کیا تھا جس کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئی تھی.

سماجی رابطوں کی ویب سائٹ پر ردعمل دیتے ہوئے جاوید نایاب لغاری کا کہنا تھا کہ طلال چودھری گالی گلوچ کی سیاست تمھارے لیڈران نے نوے کی دھائی میں شروع کی اور بعد میں مافیاں مانگی۔ اب تم پھر شروع کروگے بعد میں مافیاں مانگوگے۔ ہماری لیڈرشپ نے ہمیشہ غیرت اور عزت کی سیاست کی ہے اور ہمیں اس کی تلقین کی ہے۔ معافی مانگو ورنہ ہمیں ہر طرح کا جواب دینا آتا ہے.

نصیر میمن کا کہنا تھا کہ طلال چودھری کی بازاری زبان سن کر اندازہ ہوتا ہے کہ مسلم لیگ (ن) کا یہ حال کیوں ہوا ہے. اگر تنظیم کی نمائندگی اس طرح کے تعفن زدہ زبانیں کریں گی تو برے وقت میں ان کے ساتھ کوئی ساتھ نہیں کھڑا ہوگا. ان رویوں نے سیاست کو گٹرخانہ بنا دیا ہے.

معاملے پر ردعمل دیتے ہوئے ترجمان پیپلزپارٹی فیصل کریم کنڈی کا کہنا تھا کہ مسلم لیگ ن والے طلال چودھری کی زبان کو لگام دیں ، پیپلز پارٹی کے جیالے اپنی قیادت کے خلاف غیر مہذب زبان برداشت نہیں کرینگے ، ہم نے ایسی ہی زبان میں جواب دیا تو ن لیگ کو بہت تکلیف ہوگی ، طلال چودھری کے کردار کی وجہ سے ن لیگی کارکن ان کی پٹائی کرتے ہیں.

فیصل کریم کنڈی نے کہا طلال چودھری ہم پر غصہ نکالنے کی بجائے اپنے بھگوڑے لیڈر کو واپس بلائیں، پنجاب بزدلوں کا نہیں بہادروں کا صوبہ ہے ، پارٹی تو ابھی شروع ہوئی ہے ن لیگ کی بوکھلاہٹ قابل دید ہے ، پی ٹی آئی شکست کے خوف سے میدان سے بھاگ چکی اب سرکس کے شیروں کی باری ہے . ان کا کہنا تھا کہ پنجاب کے جیالے شیر کے جبڑے سے اپنی نشستیں نکالیں گے .

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں