انجیر کو شہد کے ساتھ کھانے کے 5 حیرت انگیز فوائد

لاہور: (ویب ڈیسک) انجیر کو شہد میں ملا کر کھانے سے آپ کو کئی طرح سے فائدہ ہوگا۔ یہ دونوں‌چیزیں بہت سے جسمانی متعلق مسائل کو دور کرتی ہیں۔ اس کے فائدے جانیں۔

سردیوں میں انجیر اور شہد کا استعمال صحت کے لیے بہت فائدہ مند سمجھا جاتا ہے۔ یہ آپ کو بہت سی بیماریوں سے بچائے گا۔ انجیر میں فائبر، کاپر، آئرن اور وٹامن جیسے غذائی اجزا پائے جاتے ہیں۔ اس کے ساتھ ہی شہد میں موجود خصوصیات آپ کو بیماری اور انفیکشن سے بچاتی ہیں۔

ہضم کے لئے

انجیر میں موجود کیلشیم، فائبر اور اینٹی آکسیڈنٹس جسم کے لیے انتہائی مفید ہیں۔ شہد اور انجیر کو ایک ساتھ کھانے سے بہت سے مسائل دور ہو جائیں گے۔ شہد کا استعمال مدافعتی نظام کو تقویت دیتا ہے اور مناسب ہاضمہ برقرار رکھتا ہے۔ شہد اور انجیر ملا کر کھائیں۔ اس سے پیٹ سے متعلق مسائل دور ہو جائیں گے۔

وزن کم کرنے میں مفید

وزن کم کرنے اور موٹاپے سے نجات کے لیے شہد اور انجیر کا استعمال کریں۔ انجیر کو روزانہ صبح شہد میں ملا کر کھائیں۔ انجیر فائبر سے بھرپور ہوتی ہے جو ہاضمے میں مدد دیتی ہے۔ شہد میں ایسی خصوصیات بھی ہوتی ہیں جو ہاضمے کو درست رکھتی ہیں۔ روزانہ ایک سے دو انجیر ایک چمچ شہد میں ملا کر کھائیں۔ انجیر اور شہد کا استعمال تناؤ اور ڈپریشن کے مسئلے میں بھی آپ کو فائدہ دے گا۔

ہڈیوں کے لیے

انجیر میں کیلشیم کی مناسب مقدار پائی جاتی ہے۔ انجیر کے باقاعدگی سے استعمال سے ہڈیاں مضبوط ہوتی ہیں۔ اس کے علاوہ شہد میں موجود خصوصیات ہڈیوں کے درد اور جوڑوں کی سوجن کو دور کرتی ہیں۔

گلے کی سوزش

شہد اور انجیر گلے کی خراش کو دور کرنے میں بھی فائدہ مند ہیں۔ خشک انجیر کو شہد میں ملا کر پانی میں ڈالیں اور اس کے بعد اس پانی اور انجیر کو پی لیں۔ دن میں تین سے چار مرتبہ اس کا استعمال گلے کی خرابی میں فائدہ دیتا ہے۔

جلد کے لئے

جلد سے متعلق مسائل پر قابو پانے کے لیے انجیر اور شہد کا استعمال بہت فائدہ مند ہے۔ خشک انجیر روزانہ شہد میں بھگو کر کھائیں۔ اس سے فائدہ ہوگا۔

دوسری جانب آپ کو کشمش کی افادیت کے بارے میں بھی بتاتے چلیں کہ یہ وٹامن بی 6 کا ایک اچھا ذریعہ ہونے کے ساتھ ساتھ اس میں پروٹین، آئرن، فائبر، کیلشیم، میگنیشیم، پوٹاشیم، کاپر اور مینگنیج بھی ہوتا ہے۔ روزانہ 10 سے 12 کشمش کے دانے آپ کی صحت میں بہت سی اچھی تبدیلیاں لا سکتے ہیں۔

فاسفورس، کیلشیم اور پوٹاشیم کی وافر مقدار کی وجہ سے بچوں کی جسمانی اور ذہنی نشوونما تیز ہوتی ہے۔ روزانہ کشمش کا استعمال مردوں میں سپرم کی تعداد بڑھانے میں کارآمد ثابت ہوتا ہے۔

کشمش میں فائبر کی اچھی مقدار ہونے کی وجہ سے قبض کا مسئلہ دور رہتا ہے۔ اپنا وزن کم کرنے کے لیے روزانہ بھیگی ہوئی کشمش کھائیں۔ کشمش کھانے سے کیویٹی کا مسئلہ بھی دور رہتا ہے کیونکہ اس میں فائٹو نیوٹرینٹس ہوتے ہیں جو دانتوں اور مسوڑھوں کو محفوظ اور مضبوط رکھتے ہیں۔ کیلشیم کی مقدار کی وجہ سے اس کا استعمال ہڈیوں اور دانتوں کو مضبوط کرنے کے قابل ہے۔

نائٹرک آکسائیڈ کی موجودگی کی وجہ سے کشمش کا استعمال لو بلڈ پریشر بڑھانے میں مددگار ثابت ہوتا ہے۔ لیکن ہائی بلڈ پریشر والے افراد کو اسے استعمال کرنے سے پہلے ڈاکٹر سے مشورہ کرنا نہیں بھولنا چاہیے۔

خون کی کمی سے بچنے کے لیے خواتین کو کشمش کا استعمال کرنا چاہیے کیونکہ اس میں فولاد وافر ہوتا ہے اس لیے یہ خون کی فراہمی کی صلاحیت رکھتا ہے۔

کولیسٹرول کی سطح کو کنٹرول میں رکھنے کے لیے کشمش کا استعمال ایک اچھا آپشن ہے۔ کشمش میں فائبر موجود ہوتا ہے جو معدے سے متعلق مسائل کو دور کرنے میں مدد دیتا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں