سردیوں میں دھوپ لینے کا صحیح طریقہ اور وقت کیا ہے؟

لاہور: (ویب ڈیسک) سردیوں میں دھوپ سے آپ کو بہت سے فوائد حاصل ہوتے ہیں۔ صحت کے لیے سردیوں میں خوراک جتنا کردار ادا کرتی ہے، سورج کی روشنی بھی اتنی ہی اہم ہے۔

وٹامن ڈی جسم کے لیے بہت ضروری ہے۔ اگر جسم میں وٹامن ڈی کی سطح کم ہو جائے تو کئی بیماریاں لاحق ہو سکتی ہیں۔ سردیوں میں سورج کی روشنی لینے سے بیرونی جلد کے ساتھ اندرونی حصے بھی متاثر ہوتے ہیں۔

سردیوں میں آپ گرم کپڑے پہنتے ہیں۔ جس کی وجہ سے جسم کو سورج کی روشنی نہیں ملتی اور قوت مدافعت بھی کمزور ہوتی ہے اور بیماریوں کا خطرہ بڑھ جاتا ہے۔ کچھ دیر دھوپ میں بیٹھنے سے آپ کو بہت سے فوائد حاصل ہوں گے۔

سورج کی روشنی وٹامن ڈی کا ایک اچھا ذریعہ ہے۔ یہ جسم کو کیلشیم بھی فراہم کرتا ہے۔ دھوپ میں بیٹھنے سے جسم کو تقریباً 90 فیصد وٹامن ڈی حاصل ہوتا ہے۔ اس سے پٹھے اور ہڈیاں مضبوط ہوتی ہیں۔ یہ سردی کی وجہ سے ہونے والے درد میں بھی آرام دیتا ہے۔

دھوپ میں بیٹھنا بہتر نیند کے لیے بھی فائدہ مند ہے۔ سورج کی روشنی ہمارے دماغ میں موجود میلاٹونن ہارمون کو بڑھاتی ہے۔ یہ ہارمون نیند آنے میں مدد کرتا ہے۔ اگر آپ کو رات کو اچھی نیند نہیں آتی تو ہر روز کچھ دیر سردیوں کی دھوپ میں بیٹھیں۔ اس سے نیند میں بہتری آئے گی۔

دھوپ میں بیٹھنا دماغی صحت کے لیے بھی فائدہ مند ہے۔ سورج کی شعاعیں سیروٹونن نامی ہارمون کے اخراج کو بڑھاتی ہیں۔ اس سے موڈ بہتر ہوتا ہے اور ہمیں توانائی کا احساس ہوتا ہے۔

دھوپ ڈپریشن اور نفسیاتی جذباتی صحت کے لیے بھی فائدہ مند ہے۔ اگر آپ کو ڈپریشن یا پریشانی کا مسئلہ ہے تو سردی میں سورج کی روشنی ضرور لیں۔

سورج کی روشنی قوت مدافعت اور میٹابولزم کو بہتر کرتی ہے۔ یہ آپ کو بیماریوں سے بچائے گی۔ کچھ دیر دھوپ میں بیٹھنے سے نزلہ، کھانسی، موٹاپا، ایگزیما، چنبل، یرقان، ہائی بلڈ پریشر، فنگل انفیکشن اور بیکٹیریل انفیکشن جیسے مسائل میں فائدہ ہوگا۔

ہفتے میں کم از کم 3 سے 4 بار صبح یا شام کے وقت دھوپ میں بیٹھیں۔ ہلکی ہلکی گرم دھوپ میں تقریباً 20 سے 30 منٹ تک بیٹھنا آپ کے لیے فائدہ مند ہوگا۔ تاہم اس سے زیادہ دھوپ میں بیٹھنے سے گریز کریں۔ زیادہ دیر تک دھوپ میں بیٹھنا ٹیننگ کے مسائل کا باعث بن سکتا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں