عبدالجوشی نے دنیا کی بلند ترین چوٹی ماؤنٹ ایوریسٹ سر کر لی

پاکستانی کوہ پیما عبدالجوشی جو پاکستانی حلقوں میں ’پاتھ فائنڈرز‘ کے نام سے مشہور ہیں، انہوں نے دنیا کی بلند ترین چوٹی ماؤنٹ ایوریسٹ سر کر لی ۔

تفصیلات کے مطابق 38 سالہ کوہ پیما عبدالجوشی کی ٹیم نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ پیر کی صبح انہوں نے کامیابی کے ساتھ 8 ہزار 849 میٹر اونچی دنیا کی بلند ترین چوٹی کو سر کیا۔

عبدالجوشی ماؤنٹ ایوریسٹ کو سر کرنے والے آٹھویں پاکستانی ہیں البتہ 8 ہزار میٹر سے بلند دنیا کی 14 چوٹیوں میں سے یہ ان کی دوسری چوٹی ہے ، اور وہ اس سے پہلے اناپورنا کو بھی سر کر چکے ہیں۔

عبدالجوشی سے پہلے ثمینہ بیگ ، مرزا علی بیگ، ، عبدالجبار بھٹی، سرباز علی، شہروز کاشف، نذیر صابر اور حسن سدپارہ بھی ماؤنٹ ایوریسٹ کو سر کر چکے ہیں۔

ہنزہ سے تعلق رکھنے والے عبدالجوشی نے گذشتہ سال گلگت بلتستان میں واقع مشکل ترین پاسو کونز کو سر کیا تھا اور وہ پاسو کونز کو سر کرنے والے پہلے ماونٹینیئر ہیں۔اس سے پہلے وہ 6050 میٹر بلند منگلک سر کو کلائمب کر چکے ہیں جبکہ کے ٹو پر بھی وہ کیمپ تھری تک ہی پیش قدمی کر پائے تھے مگر سخت موسم نے انہیں واپسی کا رخ کرنے پر مجبور کر دیا تھا۔

عبدالجوشی عام طور پر ان چوٹیوں کا رخ کرنے کے لئے مشہور ہیں جو ماضی میں کسی نے سر نہ کی ہو۔گذشتہ سال ایک انٹرویو میں عبدالجوشی کا کہنا تھا کہ جونہی ان کی نظر کسی چوٹی پر پڑتی ہے تو ان کی نظریں خودبخود اس پر ٹریک تلاش کرنا شروع کر دیتی ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں