مہنگا پیٹرول افورڈ نہ کرنے والوں کیلئے ریلیف کا فیصلہ

وزیراعظم شہباز شریف نے پیٹرول مہنگا افورڈ نہ کرنے والے غریب عوام کیلئے بڑا ریلیف دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ آج وہ بڑا اعلان کرنے جا رہے ہیں۔

اس بات کی تصدیق وفاقی وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے ایک نجی ٹیلی وژن سے گفتگو کرتے ہوئے کی۔ ان کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف کا پروگرام ضرور بحال ہوگا۔ ہم پیٹرولیم مصنوعات پر سبسڈی کے متحمل نہیں ہو سکتے۔

وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل کا کہنا تھا کہ غریب عوام کے لئے پیکج کا اعلان آج وزیر اعظم کریں گے۔ تحریک انصاف نے آئی ایم ایف سے جو وعدے کئے اس کے مطابق پیٹرول اور ڈیزل مہنگا نہیں کریں گے۔

ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ فی لیٹر پیٹرول پر 30 روپے اضافہ زیادہ اور اس سے ملک میں مہنگائی بھی بڑھے گی، اس میں کوئی دو رائے نہیں ہے۔ کسی حکمران کیلئے ایسا مشکل فیصلہ لینا آسان نہیں ہوتا جب آپ کے مخالفین ملک میں افراتفری بھی پھیلا رہے ہوں لیکن وزیراعظم شہباز شریف نے یہ فیصلہ کیا۔ اس ہمیں سیاسی نقصان بھی ہوگا لیکن اس کے ازالے کیلئے ہمیں جو بھی قربانی دینا پڑی ہم دیں گے۔

یہ بھی پڑھیں: حکومت کا پٹرول 30 روپے فی لیٹر اضافے کا اعلان

خیال رہے کہ حکومت نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کا اعلان کردیا ہے۔ وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے گذشتہ روز اس معاملے پر اہم پریس کانفرنس کی جس میں انہوں نے کہا کہ سابق حکومت کی پالیسیوں کے باعث آج مشکلات کا سامنا ہے۔ سابق حکومت نے پیٹرول اور ڈیزل کی قیمت کو فکس کیا، عوام پر کسی بھی قسم کا بوجھ ڈالنا ہمارے لیے مشکل فیصلہ تھا۔

وزیر خزانہ نے کہا کہ آئی ایم ایف نے پیٹرول کی قیمت بڑھانے تک ریلیف سے انکار کیا ہے، عمران خان کے فارمولا پر جاؤں تو پیٹرول205روپے لیٹر ہو جائے گا، پیٹرول کی قیمت میں اضافہ سے روپے کو استحکام ملے گا۔

مفتاح اسماعیل نے کہا کہ پیٹرول اور ڈیزل مہنگا ہونے سے تھوڑی سی مہنگائی بڑھتی ہے، جیسےہی روپے کی قدر میں اضافہ ہوگا قیمتیں نیچے آئیں گی،ہم سمجھتے ہیں فیصلے سے ہماری سیاست کو نقصان پہنچے گا، حکومت پاکستان نےیہ مثبت قدم اٹھایاہے۔

وزیر خزانہ کا کہنا تھا کہ ڈیزل کی نئی قیمت174روپے15پیسے ہو جائے گی، پیٹرول کی فی لیٹرقیمت 179روپے86پیسےہوجائےگی، وزیراعظم شہبازشریف نے یہ مشکل فیصلہ لیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں