خلائی کمپنی بلیو اوریجن کا پانچواں کامیاب خلائی سیاحتی مشن

ایمیزون کے مالک جیف بیزوس کی بلیو اوریجن نے 6 سیاحوں کو دس منٹ پر محیط خلا کی کامیاب سیر کروائی ہے۔

تفصیلات کے مطابق خبر رساں ادارے اے ایف پی کا کہنا ہے کہ نیو شیپرڈ نامی سفید خلائی جہاز نے ہفتہ کی صبح مغربی ٹیکساس کے ایک صحرا سے مقامی وقت 8 بج کر 26 منٹ پر پرواز بھری تھی اور جس نے خلا کی 10 منٹ کی سیر کروائی۔خلائی کمپنی بلیو اوریجن کا یہ پانچواں کامیاب خلائی سیاحتی مشن ہے۔

فلائٹ میں کاٹیا ایچزیریٹا بھی موجود تھیں کہ جو 26 سال کی عمر میں خلا کا سفر کرنے والی سب سے کم عمر امریکی خاتون ہیں، میکسیکو میں پیدا ہونے والی کاٹیا ایچزیریٹا پہلی میکسیکن ہیں کہ جنہیں خلا میں جانے کا موقع ملا،کاٹیا کو ’سپیس فار ہیومینٹی‘ پروگرام کے تحت سپانسر کیا گیا تھا۔

بلیو اوریجن کے کریو نے وکٹر کوریا ہسپانا کا بھی انتخاب کیا ہے کہ جو خلا میں داخل ہونے والے پہلے برازیلین شہری ہیں۔اس پروگرام کا مقصد سب کو خلا تک رسائی دینا ہے۔ ان کا انتخاب سات ہزار امیدواروں میں سے ہوا تھا۔

خیال رہے کہ بلیو اوریجن نے خلائی پرواز کے ٹکٹ کی قیمت مکمل طور پر خفیہ رکھی ہے۔

خلائی جہاز ایک سو کلومیٹر کی بلندی طے کرنے کے بعد کرمن لائن پار کر کے خلا میں داخل ہو گیا تھا اور بین الاقوامی فیڈریشن کے مطابق اس لکیر کے بعد زمین کی حد ختم ہو جاتی ہے اور خلائی حدود کا آغاز ہو جاتا ہے۔ اب اس بلندی پر کچھ منٹوں کے لیے بے وزنی کی کیفیت محسوس ہوتی ہے اور خلائی جہاز نیو شیپرڈ کی بڑی بڑی کھڑکیوں سے زمین کو بھی دیکھ سکتے ہیں۔خلا کی سیر مکمل کرنے کے بعد نیو شیپرڈ خلائی جہاز کی تین دیوہیکل پیراشوٹس اور ریٹرو انجن کی مدد سے زمین پر واپسی ہو گئی تھی۔

ابتدائی طور پر نیو شیپرڈ کا خلائی سفر 20 مئی کو شیڈول تھا مگر خلائی جہاز کے سسٹم میں خرابی کے باعث دیر کا شکار ہو گیا،تاہم بلیو اوریجن نے مسئلے کی تفصیلات نہیں فراہم کی تھیں ۔ خلائی سیاحت کی مارکٹ میں بلیو اوریجن کو برتری حاصل ہے۔

یاد رہے کہ بلیو اوریجن کی پرواز جولائی 2021 میں پہلی مرتبہ جیف بیزوس کو خلا کے سفر پر لے کر گئی تھی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں