سلمان خان کے قتل کی سازش، شارپ شوٹر کو سپاری دیدی گئی

بالی ووڈ اداکار سلمان خان کو لکھے گئے دھمکی آمیز خط کے بعد یہ بات سامنے آئی ہے کہ لارنس بشنوئی کے گینگ نے ان کے قتل کی سازش تیار کرکے ایک شارپ شوٹر کو سپاری دیدی تھی۔

انڈین میڈیا کے مطابق سلمان خان اور ان کے والد کو موصول ہونے والے دھمکی آمیز خط کی تحقیقات کے درمیان، یہ بات سامنے آئی ہے کہ اداکار کے گھر کے قریب ایک شارپ شوٹر کو رکھا گیا تھا۔ اس شارپ شوٹر کو گینگسٹر لارنس بشنوئی نے بھیجا تھا۔

رپورٹ کے مطابق، اس شارپ شوٹر نے ہاکی کیس میں چھوٹے بور کا ہتھیار چھپا رکھا تھا۔ بشنوئی کے گینگ کے ارکان نے اداکار سلمان خان کے روزمرہ کے معمولات جاننے کے لیے ان کے گھر کا چکر لگایا۔ انہیں پتہ چلا کہ مسٹر خان جب سائیکل چلاتے ہیں تو اپنے ساتھ سیکورٹی گارڈز نہیں لے جاتے۔

رپورٹ میں کہا گیا کہ شارپ شوٹر سلمان خان کو قتل کرنے کیلئے مقررہ دن ان کے گھر کے باہر پہنچا تو پولیس کی گاڑی کو دیکھ کر اس نے اپنا منصوبہ ترک کر دیا۔

دریں اثنا، ممبئی پولیس نے اداکار کے والد سلیم خان کو خط پہنچانے میں ملوث افراد کی شناخت کی۔ ملزم سدھیش ہیرامن کامبلے عرف مہاکل سے پوچھ گچھ کے دوران یہ بات سامنے آئی ہے جو لارنس بشنوئی گینگ کا رکن ہے۔

خط کے دو ابتدائی الفاظ G.B. اور L.B ہیں جسے لارنس بشنوئی اور اس کے کینیڈا میں مقیم معاون گولڈی برار کے ناموں سے تعبیر کیا جا رہا ہے۔

پولیس کے مطابق ملزم مہاکال نے انکشاف کیا کہ بشنوئی کا ساتھی وکرم براد خط سلیم خان کے پاس لے گیا تھا۔

ممبئی پولیس کا کہنا ہے کہ جیل میں بند گینگسٹر لارنس بشنوئی نے سلمان خان اور ان کے والد سلیم خان کو خط جاری کیا تھا۔ اس کے گینگ کے تین لوگ جالور اور راجستھان سے اس خط کو چھوڑنے کے لیے ممبئی آئے تھے اور ملزم سدھیش ہیرامن کامبلے سے ملے تھے۔

خیال رہے کہ لارنس بشنوئی سدھو موسے والا کے قتل کا اہم ملزم ہے۔ اس نے مبینہ طور پر پولیس کو بتایا ہے کہ اس کے گینگ نے گلوکار کے قتل کی منصوبہ بندی کی اور اسے انجام دیا، لیکن وہ اس میں ملوث نہیں تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں