بیٹے کیلئے الیکشن مہم ، شاہ محمود قریشی اپنی ہی پارٹی پر برس پڑے

تحریک انصاف کے سینئر رہنماء شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ میرے خلاف میری پارٹی نے سازش کی، 2018 میں مجھے پی ٹی آئی نے الیکشن ہرایا، برملا کہہ رہا ہوں اور عمران خان کو بھی کہا ہے، مجھے کیا فرق پڑا میں تو وزیر خارجہ بن گیا، آج پنجاب کی یہ کیفیت نہ ہوتی اگر یہاں سے ایم پی اے ہوتا.

شاہ محمود قریشی نے اپنے بیٹے زین قریشی کی الیکشن مہم کے دوران کارنر میٹنگ سے خطاب کرتے کہا کہ 2018 میں مجھے میری ہی جماعت پی ٹی آئی نے یہاں سے ہروایا تھا۔ ان کا کہنا تھا کہ مجھے لوگوں نے کہا زین کو مت لڑاؤ، الیکشن ہار گیا تو بےعزتی ہوگی، کچھ جنگیں صرف جیت کے لیے ہی نہیں لڑی جاتیں.


واضح رہے کہ 2018 ء میں محمد سلمان نعیم نے شاہ محمود قریشی کو پی پی 217 سے شکست دی تھی۔ بعد میں سلمان نعیم پی ٹی آئی میں شامل ہوگئے تھے۔ اب الیکشن کمیشن نے انہیں حمزہ شہباز کو ووٹ دینے پر ڈی سیٹ کیا ہے اور یہاں ضمنی الیکشن ہو رہا ہے۔ محمد سلمان نعیم پاکستان مسلم لیگ ن کے ٹکٹ پر الیکشن لڑ رہے ہیں جبکہ شاہ محمود قریشی نے اپنے بیٹے زین قریشی کو میدان میں اتارا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں