ٹرین زیادتی کیس، خاتون اپنے بیان سے مکر گئی

ٹرین زیادتی کیس میں سیکیورٹی گارڈز پر ریپ کا الزام لگانے والی خاتون اپنے بیان سے مکر گئی ہے۔ معاملے کی تفتیش کرنے والی پولیس ٹیم نے رپورٹ اعلیٰ حکام کو بھجوا دی ہے۔

خیال رہے کہ گذشتہ روز سر سید ایکسپریس ٹرین پر سفر کرنے والی ایک خاتون نے الزام عائد کیا تھا کہ اسے سیکیورٹی گارڈز نے زیادتی کا نشانہ بنایا ہے۔ اس کے بعد پولیس نے فوری ایکشن لیتے ہوئے 2 گارڈز کو گرفتار کر لیا تھا۔

تاہم ابتدائی تفتیش میں سیکیورٹی گارڈز نے پولیس کو بیان دیا تھا کہ الزام لگانے والی خاتون جھوٹ بول رہی ہے۔ وہ ٹکٹ کے بغیر سر سید ایکسپریس میں سفر کر رہی تھی۔ اسے گرفتار کیا تو اس نے ریپ کا الزام لگا دیا۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ سیکیورٹی گارڈز پر الزام لگانے والی اس خاتون کا نام فائزہ ہے۔ معاملہ رپورٹ ہونے کے بعد اس خاتون کا فوری میڈیکل ٹیسٹ کروایا گیا جس میں یہ بات ثابت ہوئی کہ وہ جھوٹ بول رہی ہے، کسی نے اس کیساتھ زیادتی کی۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ خاتون کے جھوٹ کا جب پول کھلا تو اس نے سارے معاملے سے خود ہی پردہ اٹھاتے ہوئے کہا کہ اس کیساتھ کسی نے زیادتی نہیں کی ہے۔ اب وہ زیادتی کے الزام سے مکر گئی ہے۔

یہ بھی پڑھیں: ٹرین گینگ ریپ کیس، متاثرہ خاتون کو نوکری دینے کا فیصلہ

خیال رہے کہ کچھ عرصہ قبل نجی کمپنی کے زیر انتظام چلنے والی بہاء الدین ذکریا ٹرین میں ایک اکیلی خاتون کو عملے نے درندگی کا نشانہ بنا دیا تھا۔ یہ متاثرہ خاتون طلاق یافتہ ہے اور اپنے بچوں سے مل کر واپس کراچی آ رہی تھی کہ اس کیساتھ یہ افسوسناک سانحہ پیش آگیا۔

اس واقعے کی خبریں میڈیا پر چلیں تو حکام نے نوٹس لیتے ہوئے تمام ملزموں کو گرفتار کرکے مقدمہ درج کر لیا تھا۔ پولیس کی تفتیش میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ درندوں نے خاتون کیساتھ اجتماعی زیادتی کرتے ہوئے اس کی ویڈیو بھی بنائی۔ اس معاملے کی مزید تفتیش بھی کی جا رہی ہے۔

پاکستان ریلوے نے بہاء الدین ذکریا ایکسپریس کے عملے کی جانب سے گینگ ریپ کا نشانہ بننے والی خاتون کو نوکری دینے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق خاتون کی عمر 25 سال اور دو بچوں کی والدہ ہیں۔ اس خاتون کو ناصرف پاکستان ریلوے میں نوکری دی جائے گی بلکہ معاوضہ دینے کا بھی فیصلہ کیا گیا ہے۔

وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے متثرہ خاتون سے ٹیلی فونک رابطہ کرکے ملازمت اور معاوضے کی پیشکش کی جبکہ ان کو انصاف فراہم کرنے کیلئے مکمل تعاون کا یقین بھی دلایا۔

خواجہ سعد رفیق کا خاتون سے کہنا تھا کہ ہم کبھی آپ کو اکیلا نہیں چھوڑیں گے۔ آپ کیساتھ انصاف کی فراہمی کے حوالے سے ہر ممکن تعاون کیا جائے گا۔ اس مقصد کیلئے آپ کیلئے ایک خاتون فوکل پرسن کا تقرر کر دیا گیا ہے۔

ترجمان پاکستان ریلوے کی جانب سے اس حوالے سے تفصیلات دیتے ہوئے کہا گیا ہے کہ وفاقی وزیر خواجہ سعد رفیق نے خصوصی ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ کیس پر اٹھنے والے تمام اخراجات بھی محکمہ اٹھائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں